انسانی خلائی پرواز کے لئے اِسرو کا کامیاب تجربہ

انسان کو خلاء میں بھیجنے کے اپنے مقصد کی سمت پیشرفت کرتے ہوئے ہندوستانی خلائی ایجنسی اِسرو نے آج پہلی مرتبہ عملہ کے بچاؤ کے سسٹم (کرو اسکیپ سسٹم ) کو جانچنے سلسلہ وار تجربے کئے۔ اِسرو نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ خلاء میں انسانی پرواز کے لئے عملہ کے بچاؤ کا سسٹم انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔ لانچنگ کو روکنے کی صورت میں عملہ کے ماڈیول کوخلابازوں کے ساتھ فوری طورپر لانچ وہیکل سے محفوظ فاصلہ پر پہنچانے عملہ کے بچاؤ کا سسٹم ایک ہنگامی بچاؤ اقدام ہے۔ اسرو نے کہا کہ پہلا تجربہ (پیاڈ ابارٹ ٹسٹ ) نے کسی بھی ہنگامی صورتحال میں عملہ کے ماڈیول کی بحفاظت بازیابی کا مظاہرہ کیا۔ اسرو کے مطابق 5 گھنٹے کی الٹی گنتی آسان ثابت ہوئی۔ عملہ کے بچاؤ کے سسٹم کا مجموعی وزن 12.6 ٹن تھا۔ اس ماڈیول کو آندھراپردیش کے سری ہری کوٹہ میں واقع ستیش دھون اسپیس سنٹر سے صبح 7 بجے روانہ کیا گیا۔ تجربہ 259 سکنڈ میں مکمل ہوگیا جس کے دوران عملہ کے بچاؤ کا نظام اور عملہ کا ماڈیول آسمان کی طرف اڑا اور پھر پیراشوٹ کی مدد سے خلیج بنگال میں گرکر دوبارہ زمین کی طرف بہنے لگا۔

جواب چھوڑیں