تلنگانہ میں ٹیکس وصولی میں 19فیصد کا اضافہ: سومیش کمار

ایک ملک ایک ٹیکس جی ایس ٹی (گڈس اینڈ سرویس ٹیکس) پر عمل آوری کا ایک سال مکمل ہوچکا ہے۔ اس ایک سال کے دوران ریاست تلنگانہ میں تیزی کے ساتھ 1.5لاکھ نئے تاجروں کو اس نئے ٹیکس جی ایس ٹی کے تحت لایا گیا ہے جس کی وجہ سے سال 2017-18کے دوران تلنگانہ میں 42,054کروڑ روپئے کا ٹیکس وصول کیا گیا ہے جبکہ سال 2016-17میں 35,232کروڑ روپئے ٹیکس وصول ہوا تھا اس طرح ٹیکس وصول میں 19.3فیصد کا اضافہ درج ہوا ہے۔ پرنسپل سکریٹری کمرشیل ٹیکس واکسائز سومیش کمار نے چند صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ مںی رواں مالیاتی سال اپریل تا جون کے اواخر تک 10,879کروڑ روپئے ٹیکس وصول کیا گیا ہے۔ ٹیکس کی وصولی کا تناسب 18.5فیصد ہے۔ ایک سوال کے جواب میں سومیش کمار نے کہا کہ جولائی 2017سے مارچ 2018تک 9ماہ کے درمیان تلنگانہ کو 15,705کروڑ روپئے کی آمدنی کا تخمینہ لگایا گیا ہے جبکہ اس مدت کے دوران ریاست میں 15,755کروڑ روپئے کا ٹیکس وصول کیا گیا اس لئے ریاست کو مرکز کی جانب سے کوئی معاوضہ کی ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے فخریہ انداز میں کہا کہ ریاست کو معاوضہ کیلئے مرکزی حکومت پر منحصر رہنے کی ضرورت نہیں ہے۔ ہماری معیشت اور تجارت بہتر ہے اس لئے ہمیں مرکز کے معاوضہ کی ضرورت نہیںہے۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری کاموں جیسے آبپاشی پراجکٹس‘ ڈبل بیڈروم مکانات اسکیم وغیرہ سے ریاست کے 6ہزار کروڑ روپئے کی بچت ہوئی۔ یہ بجٹ‘ ٹیکس کی شرح کو 21فیصد سے گھٹا کر 18فیصد کرنے سے ہوئی ہے۔ تعمیرات‘ ارتھ مووینگ کاموں کے چند معاملات میں 5فیصد ٹیکس مقرر کیا گیا ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ جی ایس ٹی کے نفاذ سے قبل سال 2016-17کے دوران ریاست میں 6.33لاکھ دستاویزات کی رجسٹری کرائی گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ پہلے ڈاکومنٹس (دستاویزات) میں مارکٹ کی قیمت بتائی جاتی تھی مگر اب رحجان تبدیل ہورہا ہے اب دستاویزات میں تخمینہ قیمت (ویلویو) بتایاجارہا ہے۔ انہوں نے مارکٹ کی قدر وقیمت تخمینہ قدر وقیمت سے مختلف ہوتی ہے۔ 6.33لاکھ دستاویزات میں بتائی گئی مارکٹ کے لحاظ سے قدر وقیمت 40,809کروڑ روپئے ہوتی ہے جبکہ یہی تخمینہ قدر وقیمت 49,627کروڑ روپئے ہوتی ہے جو مارکٹ ویلویوسے تقریباً 20.7فیصد زائد ہے۔ انہوں نے جولائی 2017سے مارچ 2018تک 9ماہ کے دوران 5.56لاکھ دستاویزات کی رجسٹری کرائی گئی ہے۔ ان دستاویزات کی مارکٹ قدر وقیمت 37,681کروڑ روپئے ہے جبکہ تخمینہ قدر وقیمت 49,191کروڑ روپئے ہوتی ہے جو مارکٹ ویلویو سے تقریباً 30.5فیصد زیادہ ہے۔

جواب چھوڑیں