وجئے مالیا اثاثے کیس‘ برطانوی ہائیکورٹ کا بینکوں کے حق میں فیصلہ

 برطانیہ کے ایک ہائی کورٹ جج نے 13 ہندوستانی بینکوں کے کنسورشیم کے حق میں انفورسمنٹ آرڈر جاری کیا ہے جو شراب کے مفرور تاجر وجئے مالیا سے اپنے بقایاجات وصول کرنے کی خواہاں ہیں جبکہ وجئے مالیا تقریباً 9 ہزار کروڑ کی دھوکہ دہی اور منی لانڈرنگ کے الزامات کے تحت ہندوستان کو حوالگی روکنے کا کیس لڑرہا ہے۔ ان احکام کے تحت برطانوی ہائی کورٹ انفورسمنٹ آفیسر کو یہ اجازت حاصل ہوگئی ہے کہ وہ لندن کے قریب ہرٹ فورڈ شائر میں 62 سالہ تاجر وجئے مالیا کی جائیداد میں داخل ہوسکتے ہیں۔ ان احکام کے ذریعہ آفیسر اور ان کے ایجنٹوں کو یہ بھی اجازت مل گئی ہے کہ وہ ویل وِن کے تیون علاقہ میں لیڈی واک اور بریمبل لاج میں داخل ہوں جہاں مالیا فی الحال مقیم ہے۔ بینکس ان احکام کو تقریباً 1.145 بلین پاؤنڈس کی بازیابی کے لئے استعمال کرسکتے ہیں۔

جواب چھوڑیں