کشمیر میں کانسٹیبل کا اغوا اور قتل

عسکریت پسندوں کے ہاتھوں مغویہ جموں وکشمیر پولیس جوان کی نعش جمعہ کے دن ضلع کلگام میں پائی گئی۔ جاوید احمد ڈار کا جمعرات کو شام ضلع شوپیان کے موضع ویہل میں اس کے مکان سے اغوا کیا گیا تھا۔ اس کی نعش کلگام کے موضع پریوان میں پائی گئی۔ پولیس نے یہ بات بتائی۔ اسی دوران عسکریت پسندوں نے جمعہ کے دن ضلع پلوامہ میں ایک عالم دین محمد اشرف پر گولی چلائی۔ عالم دین کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔ یو این آئی کے بموجب عسکریت پسندوں نے جموں وکشمیر پولیس کے ایک کانسٹیبل کو جمعرات کی رات جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان میں اغوا کرلیا اور بعدازاں اسے ہلاک کردیا۔ 2 تا 3 عسکریت پسندوں کے گروپ نے 27 سالہ جاوید احمد ڈار کا اس کے مکان سے کل رات 9:30 بجے اغوا کیا۔ سیکوریٹی فورسس نے فوری وہاں پہنچ کر بڑے پیمانہ پر تلاشی مہم شروع کی تاہم جمعہ کی صبح نعش برآمد ہوئی۔ کسی بھی تنظیم نے تاحال ذمہ داری قبول نہیں کی ہے ۔ لگ بھگ ایک ماہ میں شوپیان میں یہ تیسرا اغوا ہے۔

جواب چھوڑیں