جنتادل یو ‘ بڑے بھائی کا رول ادا کرنے پر اٹل‘ بی جے پی کو پریشانی

دہلی میں اپنے قومی عاملہ اجلاس سے ایک دن قبل بی جے پی حلیف جنتادل یو نے ہفتہ کے دن واضح کردیا کہ پارٹی ‘ بہار میں بڑے بھائی کا رول ادا کرے گی اور چیف منسٹر نتیش کمار ریاست میں این ڈی اے کا چہرہ ہوں گے۔ جنتادل یو نے 2019کے لوک سبھا الیکشن میں ریاست میں مزید نشستوں پر مقابلہ کرنے کا اپنا منصوبہ بھی واضح کردیا۔ قیاس لگایا جارہا ہے کہ نشستوں کی تقسیم کے مسئلہ پر این ڈی اے میں اختلافات بڑھتے جارہے ہیں۔ سینئر جنتادل یو قائد کے سی تیاگی نے کہا کہ بہار میں 2019کے الیکشن میں نشستوں کی تقسیم کے معاملہ میں جنتادل یو کا رول بڑے بھائی کا ہوگا۔ تیاگی کا یہ بیان اس لحاظ سے سیاسی اہمیت کا حامل ہے کہ بی جے پی صدر امیت شاہ آئندہ ہفتہ بہار کا دورہ کرسکتے ہیں جہاں وہ پارٹی قائدین اور ورکرس سے ریاست میں الیکشن کی تیاریوں پر بات چیت کریں گے۔ امیت شاہ ‘ نتیش کمار سے بھی ملنے والے ہیں۔ اتوار کے دن نئی دہلی میں جنتادل یو کی قومی عاملہ کا اجلاس منعقد ہوگا جس میں نشستوں کی تقسیم کے معاملہ پر تبادلہ خیال ہوگا۔ آج چیف منسٹر بہار ‘ نئی دہلی روانہ ہوگئے۔ ان کے ساتھ ان کی پارٹی کے اعلیٰ قائدین بھی نئی دہلی گئے ہیں۔ تیاگی نے کہا کہ لوک سبھا الیکشن کے لئے این ڈی اے میں نشستوں کی تقسیم کا فارمولہ آسانی سے طے ہوجاتا ہے تو 2020کے بہار اسمبلی الیکشن کے لئے کوئی مشکل نہیں ہوگی۔ ذرائع کے بموجب جنتادل یو قیادت نے بی جے پی پر واضح کردیا ہے کہ وہ کم نشستوں پر اکتفا کرنے والے نہیں۔ وہ بی جے پی سے زیادہ نشستوں پر الیکشن لڑنا چاہیں گے کیونکہ ریاست میں ان کے ارکان اسمبلی کی تعداد زیادہ ہے۔ جنتادل یو کا یہ موقف بہار میں این ڈی اے کے لئے مسائل پیدا کرسکتا ہے کیونکہ بھارتیہ جنتا پارٹی بڑے بھائی کا رول ادا کرنے میں دلچسپی رکھتی ہے۔

جواب چھوڑیں