گیمبلنگ اور بٹنگ تنازعہ لا کمیشن کی وضاحت

 اس خبر پر تنازعہ کے چند گھنٹے بعد کہ لا کمیشن نے ملک میں گیمبلنگ اور بٹنگ کو قانونی قراردینے کی تائید کی ہے‘ جسٹس بی ایس چوہان کی زیرصدارت کمیشن نے واضح کیا کہ بٹنگ اور گیمبلنگ کو قانونی شکل دینا موجودہ تناظر میں غیرمطلوب ہے۔ کمیشن واضح کرتا ہے کہ صفحہ 115پر اس کی رپورٹ کے پیراگراف 9.7میں واضح طورپر کہا گیا کہ ہندوستان میں گیمبلنگ اور بٹنگ کو موجودہ تناظر میں قانونی شکل دینا نامطلوب ہے۔ غیرقانونی بٹنگ اور گیمبلنگ پر مکمل امتناع یقینی بنایا جائے۔ کمیشن نے یہ بھی کہا کہ مکمل امتناع ممکن نہ ہو تو موثر روک تھام ہونی چاہئے۔ کمیشن کی سفارشات پر سیاسی تنازعہ پیدا ہوگیا تھا۔ اپوزیشن نے مودی حکومت کو نشانہ تنقید بنایا تھا اور کہا کہ مکمل امتناع لاگو کرنے میں اس کی ناکامی کے باعث غیرقانونی گیمبلنگ میں کافی اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس کے نتیجہ میں کالادھن نے زور پکڑا ۔

جواب چھوڑیں