انفرااسٹرکچر اور فینانس میں جدیدیت لانے کی ضرورت:چیف منسٹر اے پی چندرا بابو نائیڈو

آندھرا پردیش کے چیف منسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے جو دو روزہ دورہ پرسنگا پور میں ہیں ، انفرااسٹرکچر اور فینانس میں مزید اختراعیت لانے ، مزید اور مزید پی پی پی وینچرس کو فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیا اور بتایا کہ ان کی حکومت ریاست میں انفرااسٹرکچر کو فروغ دینے کیلئے پی پی پی طریقہ کار کے ذریعہ کئی کمپنیوں کے ساتھ کام کررہی ہے ۔ نائیڈو نے ورلڈ سٹیز مئیرس فورم کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے یہ بات کہی ۔ اس کانفرنس میں دنیا بھر سے120 میئرس نے شرکت کی ۔ اس سے قبل چندرا بابو نائیڈو نے پروفیسر گریک کلاک سے بھی تبادلہ خیال کیا۔ چیف منسٹر نے تفصیلی طور پر بتایا کہ آندھرا پردیش کی ہمہ جہت ترقی کیلئے روبہ عمل لائے جانے والے مختلف پراجکٹوں میں کس طرح ٹکنالوجی کا استعمال کیا جارہا ہے ۔ انہوںنے انفرااسٹرکچر اور فینانس میں اختراعیت کو ضروری قرار دیا اور کہا کہ زیادہ سے زیادہ پی پی پی طریقہ کار کے ذریعہ وینچرس کوروبعمل لانے کی ضرورت ہے ۔ اس سلسلہ میں سنگا پور بہتر طور پر تعاون کرسکتا ہے۔ ہم دنیا کے مختلف مخصوص شہروں کے ساتھ کام کرنے کے خواہشمند ہیں۔چیف منسٹر نائیڈو نے امراوتی کی تعمیر اور انفرااسٹرکچر اور جدیدیت کو فروغ دینے میں سنگاپور کے تعاون پر روشنی ڈالی اور کہا کہ 2050 تک دنیا کی 66 فیصد آبادی شہری علاقوں میں رہے گی ۔ ہماری ریاست آندھرا پردیش مسائل ومشکلات سے ابھر رہی ہے اور ہمارے ویژن کے مطابق ریاست کو آگے لے جانے پر کام کیا جارہا ہے ہم چاہتے ہیں کہ سال2050 تک ریاست کو دنیا کے بہتر مقامات میں شامل کیا جائے ۔ انہوںنے آندھرا پردیش کی ترقی پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ریاست کی گھریلو پیداوار ، دہرے ہندسہ کو برقرار رکھے ہوئے ہیں اور اے پی ایز ڈوئنگ بزنس میں پہلے مقام پر ہے ۔ انفرااسٹرکچر کو فروغ دینے کیلئے ہم مختلف کمپنیوں کے ساتھ پی پی پی طریقہ سے کام کررہے ہیں امراوتی پالیسی کیلئے ہم 5-10-15 فارمولہ کے تحت کام کررہے ہیں۔ ایمرجنسی میں عوام کو 5 منٹ میں اپنے مقام کو پہونچانا چاہتے ہیں 10منٹ میں سوشل انفرااسٹرکچر اور 15منٹ میں عوام کو کام کے مقام پر پہنچنا چاہئے۔ اس فارمولے کے تحت ہم کام کررہے ہیں۔قبل ازیں چیف منسٹر چندرا بابو نائیڈو نے سنگا پور میں اتوار کو وزیر نیشنل ڈیولپمنٹ لارنس وونگ سے ملاقات کی جہاں انہوں نے دونوں ممالک کو مل جل کر کام کرنے کیلئے اس موقع کا بھر پور استعمال کرنے میں دلچسپی ظاہر کی سی ایم آفس ذرائع کے بموجب سنگا پور کے وزیر نے نائیڈو سے کہا کہ وہ امراوتی میں لینڈ پولنگ اسکیم جو ایک منفرد طریقہ ہے ، کی ستائش کرتے ہیں انہوںنے کہا کہ امراوتی کی تعمیر میں سنگا پور، عصری ٹکنالوجی استعمال کرنے میں دلچسپی رکھتا ہے اور اس شہر کو دنیا کا بہترین گرین سٹی بنانا چاہتا ہے ۔ نائیڈو نے بتایا کہ اب تک شہر میں 30ملین اسکوائر فٹ اراضی پر تعمیر ات ہوچکی ہیں ۔ 30 ہزار کروڑ روپے کے ٹنڈرس طلب کئے گئے ہیں۔ امراوتی کی تعمیر میں تمام طبقات کے عوام کو شامل کیا جانا چاہئے ۔ وونگ نے کہا کہ سنگا پور آندھرا پردیش کے ساتھ بدستور کام کرتے رہے گا انہوںنے کہا کہ وہ بہت جلد امراوتی کا دورہ کریں گے۔

جواب چھوڑیں