کرن کمار ریڈی کی چہارشنبہ کو کانگریس میں واپسی

متحدہ آندھرا پردیش کے آخری چیف منسٹر این کرن کمار ریڈی ، توقع ہے کہ 11جولائی کو کانگریس پارٹی میں دوبارہ شامل ہوجائیں گے ۔اطلاعات کے مطابق کرن کمارریڈی نے کانگریس پارٹی میں واپس ہونے کا ذہن بنالیا ہے اور وہ،11جولائی کو نئی دہلی میں صدر کل ہند کانگریس راہول گاندھی کی موجودگی میں پارٹی میں شمولیت اختیار کریں گے ۔ یہاں اس بات کا تذکرہ ضروری ہے کہ کانگریس پارٹی کی جانب سے2014 میں آندھرا پردیش کی تقسیم اور نئی ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے فیصلہ کی مخالفت کرتے ہوئے کرن کمار ریڈی نے عہدہ چیف منسٹر اور کانگریس پارٹی کی ابتدائی رکنیت سے استعفیٰ دے دیا تھا ۔ بعد میں انہوںنے سمکھیا آندھرا پردیش پارٹی تشکیل دی تھی اور انتخابات میں ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا تھا ۔ 2014 کے انتخابات کے بعد سے کرن کمار ریڈی عملی سیاست سے دور ہوگئے تھے ۔ وقتاً فوقتاً افواہیں اُڑائی جاتی رہی تھی کہ کرن کمار ریڈی ، بی جے پی میں شامل ہونے کا ارادہ رکھتے ہیں ۔ تاہم تمام افواہیں غلط ثابت ہوئیں۔ اس دوران سینئر کانگریس قائد و سابق چیف منسٹر کیرالہ اومن چانڈی جو آندھرا پردیش کانگریس امور کے انچارج بھی ہیں، نے ریاست میں پارٹی کے کمزور موقف کو دیکھتے ہوئے پارٹی سے دوری اختیار کرچکے قائدین سے رابط قائم کیا اور ان قائدین کو گھرواپسی کی دعوت دی تھی ۔ جن میں کرن کمار ریڈی بھی شامل ہیں۔ کرن کمارریڈی کی جانب سے فوراً کسی ردعمل کا اظہار نہیں کیا گیا مگر باوثوق ذرائع کے مطابق انہوںنے گھر واپسی کا فیصلہ کرلیا ہے اور وہ 11جولائی کو راہول گاندھی کی موجودگی میں کانگریس میں شامل ہوجائیں گے۔

جواب چھوڑیں