کروشیا 20 برس بعد ورلڈکپ کے سیمی فائنل میں داخل

فٹبال ورلڈکپ کے آخری کوارٹر فائنل میں کروشیا کی ٹیم نے میزبان روس کو شکست دیکر 20 سال بعد ورلڈکپ کے سیمی فائنل کیلئے کوالیفائی کرلیا ۔ فشت اسٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ میں روس کی ٹیم نے میچ کے 31 ویں منٹ میں گول کرکے برتری حاصل کی لیکن 8 منٹ بعد ہی آندرے کرامیرچ نے کروشیا کیلئے گول اسکور کرکے مقابلہ برابر کردیا۔ پہلے ہاف کے اختتام تک دونوں ٹیموں کے درمیان مقابلہ 1-1 گول سے برابر رہا۔ میچ کے دوسرے ہاف میں دونوں ٹیموں کے درمیان گول کرنے کی تگ و دو جاری رہی لیکن دونوں ٹیمیں ملنے والے مواقعوں سے فائدہ نہ اٹھا سکیں اور انتہائی کوشش کے باوجود کوئی بھی ٹیم گول اسکور نہ کرسکی۔ مقررہ وقت میں مقابلہ 1-1 سے برابر رہنے کے بعد 30 منٹ کے اضافی وقت میں میچ کو نتیجہ خیز بنانے کا فیصلہ کیاگیا۔ ایکسٹرا ٹائم کے 15 منٹ پر مشتمل پہلے ہاف میں کروشیا کی ٹیم گول اسکور کرنے میں کامیاب رہی اور میچ کے 100 ویں منٹ میں ڈوماگو ویدا نے گول کرکے اپنی ٹیم کو اہم کامیابی دلائی ۔ ایکسٹرا ٹائم کے پہلے ہاف میں کروشیا کو برتری حاصل تھی اور دوسرے ہاف میں بھی کروشیا کی ٹیم میزبان ملک کے خلاف فتح کی جانب گامزن نظر آرہی تھی لیکن کھیل کے اختتام سے 5 منٹ قبل ماریو فرنانڈس نے گول کرکے مقابلہ ایک مرتبہ پھر برابر کردیا۔ اضافی وقت میں بھی مقابلہ برابر رہنے پر میچ کا فیصلہ پنالٹی ککس پر کرنے کا فیصلہ کیاگیا۔ پنالٹی ککس پر روس کا آغاز کچھ اچھا نہ تھا اور پہلی پنالٹی کو کروشیا کے گول کیپر نے روک لیا جبکہ مارسیلو بروزووچ نے گول کرکے کروشیا کو برتری دلادی۔ ایلن زیگیوو نے روس کیلئے دوسری پنالٹی پر گول کیا لیکن کروشیا کے ماٹیو کوواچچ گول کرنے میں ناکام رہے اور مقابلہ ایک مرتبہ پھر 1-1 سے برابر ہوگیا۔ تاہم اضافی وقت میں روس کیلئے گول کرنے والے ماریو فرنانڈس تیسری پنالٹی پر گول کرنے میں ناکام رہے جبکہ کروشیا کے لوکا موڈرچ نے گول کرکے اپنی ٹیم کی برتری 1-2 کردی۔ اس کے بعد آئندہ دونوں پنالٹیز پر روس کی جانب سے گول اسکور کیاگیا لیکن دوسری جانب کروشیا نے بھی گول اسکور کرکے 3-4 کی برتری کے ساتھ پنالٹی ککس پر کامیابی حاصل کی۔ اس میچ میں کامیابی کے ساتھ ہی کروشیا کی ٹیم نے 20 سال بعد ورلڈکپ کے سیمی فائنل کیلئے کوالیفائی کرلیا جہاں اس سے قبل اس نے 1998 میں فرانس میں ہونے والے ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں جگہ بنائی تھی۔ قبل ازیں 1966 کی عالمی چمپئن انگلینڈ نے ورلڈکپ کپ کے تیسرے کوارٹر فائنل میں سویڈن کو 0-2 سے شکست دیکر 28 سال بعد عالمی کپ کے سیمی فائنل میں پہنچنے کا اعزاز حاصل کرلیا۔ میچ کی ابتدا سے ہی انگلینڈ کی ٹیم حاوی نظر آئی اور سویڈن کی ٹیم میں فنشنگ کی واضح کمی نظر آئی۔ میچ کے 30 ویں منٹ میں انگلینڈ کو ایک کارنر ملا اور ینگ کی جانب سے مارے گئے اس کارنر پر میگوئیر نے گول اسکور کرکے انگلینڈ کو برتری دلادی جو پہلے ہاف کے اختتام تک برقرار رہی۔ میچ کے 59 ویں منٹ میں سویڈن کو اس وقت دھکا لگا جب دفاعی کھلاڑیوں کے ناقص کھیل کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ڈیلی ایلی کو گول کرنے کا موقع ملا اور انہوں نے ہیڈر کے ذریعہ اپنی ٹیم کی برتری دگنی کردی کو میاچ کے اختتام تک برقرار رہی۔ ایونٹ کے پہلے سیمی فائنل میں 10جولائی کو بلجیم اور فرانس کی ٹیمیں ٹکرائیں گی جبکہ دوسرا سیمی فائنل 11 جولائی کو کروشیا اور انگلینڈ کے درمیان کھیلا جائے گا۔

جواب چھوڑیں