رافل نداال ومبلڈن کوراٹر فائنل میں داخل

 اسپین ٹینس کے عظیم کھلاڑی رافل ندال نے چیک جمہوریہ کے جیری ویزلی کو 6-3,6-2,6-4 سے شکست دے کر ومبلڈن کوارٹر فائنلس میں 2011 کے بعد سے پہلی مرتبہ اپنی جگہ بنائی جب کہ اس سال وہ فائنل تک پہنچے تھے۔ دو دفعہ کے ومبلڈن چمپئنس کو سرویس میں ویزلی کے خلاف پہلے 2 سیٹس میں چھوبھی نہیں جاسکا اور انہوں نے صرف ایک بار ہی سرویس حاصل کی اور چھٹویں گیم میں جو تیسرا سیٹ کا تھا انہوں نے یہ مظاہرہ کیا۔ ندال جو 2000 ایڈیشن میں ایک سیٹ بھی نہیں ہار سکے، اب ان کا آخری 8 میں ارجنٹائن کے مارٹن ڈیل پوٹرو یا فرانس کے جائلس سائمنس سے ہوگا۔ 17 دفعہ کے گرانڈ سلام چمپنئس واحد بائیں ہاتھ کے کھلاڑی ہیں جو ٹورنمنٹ میں برقرار ہیں جب کہ انہوں نے ویزلی کو شکست دے دی ہے۔ اسی دوران سوئیٹزرلینڈ کے راجر فیڈرر نے فرانس کے اڈریان منارینوکو شکست دے دی۔ 2011ء میں ندال کا آخری 5واں ومبلڈن تھا جب انہیں سربیا کے نواک جاکوویچ کے ہاتھوں شکست ہوئی، 2012 اور 2013ء میں دوسرے اور پہلے رائونڈس میں اخراج کے بعد اسپین کے کھلاڑی 2014ء میں 16 ویں رائونڈ تک پہنچے اور آخری میں انہیں آسٹریلیا کے نک کرگیوس سے شکست اٹھانی پڑی۔ جرمنی کے ڈسٹن برائون نے ندال کے دوڑ کو 2015ء کے ایڈیشن میں دوسرے رائونڈ میں ختم کردیا اور پھر 2016ء میں زخمی ہونے کے باعث ٹورنمنٹ سے دستبردار ہوگئے۔ گذشتہ سال ندال کو لگزمبرگ جائلس مولر کے ہاتھوں 16ویں رائونڈ کے 5 سٹوں کے مقابلے میں شکست اٹھانی پڑی۔

جواب چھوڑیں