سابقہ دستاویزات کو ڈیجیٹل بنانے کے کام میں تیزی لائیں: کڈیم

ڈپٹی چیف منسٹر (ایجوکیشن)کڑیم سری ہری نے بیش قیمت دستاویزات کو بچانے کی ضرورت پر زور دیا ہے تاکہ مستقبل کی نسلیں ملک کی تاریخ کا مطالعہ کرسکیں۔ انہوں نے عہدیداروں کو ان دستاویزات کے ڈیجیٹل طریقہ عمل میں تیزی لانے کی ہدایت دی۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے آج ایم سی آر ایچ ڈی پر ہندوستانی تاریخی دستاویزات اور محکمہ آثار قدیمہ سے متعلق ریکارڈس پر قومی ورکشاپ کا افتتاح کیا۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ سے متعلق تمام دستاویزات کو اندرون سال ڈیجٹیلائزڈ کرنا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ ٹکنالوجی کے بدلتے رحجانات اور پیشرفت کے مطابق محکمہ آثار قدیمہ کو ملک بھر کے ریکارڈس دستاویزات اور فائلس کو اپ ڈیٹ کیا جانا چاہیئے۔ انہوں نے ریاستی حکومت کی جانب سے تعاون کا تیقن دیا اور بتایا کہ تاریخی اہمیت کی حامل تقریباً 50ملین دستاویزات ہیں۔

جواب چھوڑیں