ممبئی میں بارش کا قہرجاری۔سڑکیں جھیل میں تبدیل

ممبئی میں رات بھر بارش کا سلسلہ جاری رہا جس کے بعد ویسٹرن ریلویز کی لوکل ٹرین خدمات آج معطل کردی گئیں۔محکمہ موسمیات نے جمعرات تک شدید بارش کی پیش قیاسی کی ہے۔ ریلوے کے ایک عہدیدار نے کہا کہ ’’کل رات سے 200ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔ جس سے ریلوے کی پٹریاں زیرآب آگئیں اور مسافرین کی سلامتی کے مدنظر پٹریوں پر پانی کم ہونے تک ٹرین خدمات معطل کردی گئیں۔ تاہم چرچ گیٹ اور بوریولی کے درمیان ٹرین خدمات معمول کے مطابق رہیں۔ انہوں نے کہا کہ پٹریوں سے پانی نکالنے پمپوں کا استعمال کیا جارہا ہے۔ شدید بارش کے باوجود سنٹرل ریلوے (سی آر) کی لوکل ٹرین خدمات متاثر نہیں ہوئیں۔ سی آر نے کہا کہ مین، ہاربر اور ٹرانس ہاربر لائنوں میں ٹرینیں معمول کے مطابق چل رہی ہیں۔ ٹوئٹ کے ذریعہ مسافرین کے اظہارممنونیت کے لیے اظہار تشکر بھی کیا گیا۔ ہمیں آپ سب سے کل بے شمار پیغامات اور ٹوئٹس وصول ہوئے کہ گزشتہ72گھنٹوں سے شدید موسلادھار بارش کے باوجود ہم نے بلارکاوٹ خدمات فراہم کیں۔ ہم آپ کے اس اعتماد اور بے انتہا حمایت کے لیے آپ کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔‘‘ شہر میں شدید بارش کے سبب پانی سربراہ کرنے والی اصل جھیل تلسی لبریز ہو کر بہہ رہی ہے۔ ممبئی کے ڈبے والوں نے بھی آج اپنی خدمات معطل کردیں۔ممبئی ڈبہ والا اسوسی ایشن کے ترجمان سبھاش تالیکر نے کہا کہ ’’پورا شہر زیرآب آنے کی وجہ سے ہم نے آج ٹفن جمع نہیں کیے۔ ہمارے ارکان کا اپنی سائکلوں پر گھٹنوں تک پانی سے گزرنا بے مشکل ہے۔‘‘شدید بارش سے شہر اور متصرل پال گھر اور تھانے اضلاع میں نشیبی علاقے زیرآب آگئے۔ بعض مقامات پر لوگوں کو کمر تک پانی سے گزرتے دیکھا گیا۔ محکمہ موسمیات کے کولابا آبزرویٹری نے گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران 185.8ملی میٹر بارش ریکارڈ کی ۔ سانتاکروز آبزرویٹری میں اسی مدت میں 184.3ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔ کل رات سے 200ملی میٹر سے زائد بارش ریکارڈ کی گئی جس سے ٹرین کی پٹریوں پر پانی جمع ہوگیا۔ویسٹرن ریلوے (ڈبلیو آر) نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ شدید بارش اور نالہ سوپاڑہ کے اطراف پانی جمع ہونے کی وجہ سے اے سی لوکل ٹرینوں کو معطل کردیا گیا۔ نالہ سوپاڑہ میں ٹرین کی پٹریاں مکمل طور پر زیرآب آگئی چنانچہ وسائی روڈ، ورار کے درمیان ریل ٹریفک کو معطل کردیا گیا۔ چرچ گیٹ اور وسائی روڈ کے درمیان ٹرینیں تاخیر سے چل رہی ہیں۔ پٹریوں کے زیرآب آنے کے مدنظر ویسٹرن ریلوے نے 9 بیرونی ٹرینوں کو منسوخ کردیا۔ طویل مسافتی ٹرینوں کے مسافرین کو مختلف اسٹیشنوں پر اسناکس اور پانی فراہم کرنے کے انتظامات کیے جارہے ہیں۔ سنٹرل ریلوے کی لوکل ٹرین خدمات مین اور ہاربرن لائن پر 15تا25منٹ تاخیر سے چل رہی ہیں۔ تین انٹرسٹی ایکسپریس ٹرینیں بھی منسوخ کردی گئیں۔ ایک دفاعی ترجمان نے کہا کہ ’’ہماری (بحریہ) بچائو، غوطہ خور اور فضائی ٹیمیں تیار ہیں۔ تاحال کوئی امداد طلب نہیں کی گئی۔ ہند ماتا، پریل، کنگس سرکل، دھاواری، کرلا، سائن، بھانڈوپ، وکھرولی، ملنڈ، دادر اور بوریولی علاقے جھیل میں تبدیل ہوگئی ہیں۔ ویسٹرن ایکسپریس شاہراہ پر ٹریفک کی رفتار دھیمیہے مگر ایسٹرن ایکسپریس شاہرہ پر معمول کے مطابق رہی۔ بریہن ممبئی الیکٹرک سپلائی اور ٹرانسپورٹ (بیسٹ) کی بسوں کا14روٹس پر رخ تبدیل کردیاگ یا۔ بیسٹ کے ترجمان نے یہ بات کہی۔ مہاراشٹرا کے وزیر تعلیم ونود تائوڑے نے اسکول کے پرنسپلوں کو فیصلہ کرنے کی ہدایت دی کہ آیا آج اسکولس کھلے رکھے جانے چاہیے یا نہیں۔ تائوڑے نے کہا کہ ’’ڈپٹی ڈائرکٹر کو تھانے اور او رپال گھراضلاع میں خراب موسم کے سبب اسکولوں کی بندش کو یقینی بنانے کی ہدایت دی۔‘‘ بریہن ممبئی میونسپل کارپوریشن (بی ایم سی) نے عوام سے سوشل میڈیا پر گشت کی جارہی طوفان کی افواہوں پر یقین نہ کرنے کی اپیل کی۔

جواب چھوڑیں