ہند۔کوریا 11معاہدوں پر دستخط

ہندوستان اور جنوبی کوریا نے 11معاہدوں پر دستخط کئے ہیں۔ جنوبی کوریا کے صدر مون جے ان کے دورہ ہند کے موقع پر طئے پائے ان معاہدوں میں تجارت ، ثقافت اور سائنٹفک تعاون کے معاہدے شامل ہیں۔ وزارتِ خارجہ نے منگل کے دن یہ بات بتائی۔ ایک یادداشت مفاہمت اینٹی ڈمپنگ اور سبسیڈی سے متعلق ہے۔ ایک اور یادداشت مفاہمت فیوچراسٹراٹیجی گروپ کی تشکیل کے لئے ہے جو چوتھے صنعتی انقلاب کے فوائد حاصل کرنے کے لئے ہوگی۔ 2018ء سے 2022 کے درمیان ثقافتی تبادلہ پروگرام کے لئے بھی دستخط ہوئے۔اس کے تحت عوام سے عوام کا رابطہ بڑھے گا۔ ایودھیا میں موجودہ تاریخی عمارت کی توسیع کے لئے بھی ایک یادداشت مفاہمت پربھی دستخط ہوئے۔ ایودھیا کی ایک دیومالائی شہزادی کوریا گئی تھی اور اس نے وہاں کے بادشاہ کم سورو سے شادی کی تھی۔ کوریا کے شہریوں کی بڑی تعداد اپنے آبا واجداد کی جڑیں ایودھیا میں تلاش کرتی ہے۔ نئی عمارت دونوں ممالک کے مشترکہ ثقافتی ورثہ کو خراج ہوگی۔ سائٹفک ریسرچ، ریلوے ریسرچ، بائیوٹکنالوجی اور چھوٹی ومتوسط صنعتوں کے لئے بھی ایک یادداشت مفاہمت پر دستخط ہوئے۔ پی ٹی آئی کے بموجب وزیراعظم نریندرمودی نے صدر جنوبی کوریا مون جے ان سے آج بات چیت کی تاکہ باہمی تعلقات کا جائزہ لیاجائے۔ مون جے ان اپنے پہلے سرکاری دورہ پر اتوار کو نئی دہلی پہنچے تھے۔ مودی اور مون کی بات چیت میں جزیرہ نما کوریا کی صورتحال کے علاوہ دونوں ممالک کے درمیان تجارتی اور دفاعی تعاون بڑھانے پر بات چیت ہوئی۔ وزیراعظم مودی نے کوریائی مہمان کے لئے کل رات خاص طور پر ایک رنگارنگ ثقافتی ہندوستانی رقص کا اہتمام کیاتھا۔ صدر مون اور ان کی بیگم نے ہندوستان میں رہنے والے کوریائی باشندوں کے لئے کل رات ڈنر کا اہتمام کیا تھا۔

جواب چھوڑیں