ایودھیا میں رام مندر کے لئے نماز اور قرآن خوانی منسوخ

 دریائے سریو کے کنارے راشٹریہ مسلم منچ کی مجوزہ نماز اور تلاوت ِ قرآن لمحہ آخر میں منسوخ کردی گئی کیونکہ بعض سادھو سنتوں نے اس کی مخالفت کی تھی اور فیض آباد ضلع حکام نے اجازت نہیں دی تھی ۔منصوبہ تھا کہ لگ بھگ ایک ہزار مسلمان‘ ایودھیا میں رام مندر کی جلد تعمیر کے لئے نماز ادا کریں گے اور قرآن خوانی کریں گے۔ آر ایس ایس نے اچانک اس پروگرام کی مخالفت کردی اور پروگرام کی تائید واپس لے لی۔ یہ بھی کہا گیا تھا کہ ریاستی وزیر اقلیتی امور چودھری لکشمی نارائن بھی تقریب میں موجود ہوں گے لیکن انہوں نے بھی وہاں جانے سے انکار کردیا۔ جمعرات کی صبح پروگرام کی تیاریاں جاری تھیں کہ آر ایس ایس کے ایک ٹویٹ نے مسئلہ پیدا کردیا اور ضلع حکام نے فوری پروگرام پر پابندی عائد کردی۔ آر ایس ایس کے اکھل بھارتیہ پرچار پرمکھ ارون کمار نے ٹویٹ کیا کہ آر ایس ایس ایودھیا میں کوئی نماز پروگرام نہیں کررہی ہے۔ بعض سادھو سنتوں نے دریائے سریو کے کنارے اجتماعی نماز اور قرآن خوانی کی مخالفت کی تھی اور کہا تھا کہ رام مندر کی تعمیر کے لئے نماز کی ضرورت نہیں ہے۔

جواب چھوڑیں