پٹنہ میں نتیش کمار اور امیت شاہ کی ناشتہ پر ملاقات

نشستوں کی تقسیم پر جاری رسہ کشی کی پرواہ کئے بغیر چیف منسٹر بہار نتیش کمار اور بی جے پی صدر امیت شاہ نے آج ناشتہ پر ملاقات کی۔ اس طرح یہ پیام گیا کہ این ڈی اے میں سب کچھ ٹھیک ہے۔ پٹنہ میں مختصر ملاقات میں دونوں کے چہرہ پر مسکراہٹ کیمروں میں قید ہوئی۔ سمجھا جاتا ہے کہ دونوں قائدین نے آئندہ سال کے لوک سبھا الیکشن کے مدنظر موجودہ سیاسی صورتحال پر بات چیت کی۔ گذشتہ برس کی ڈرامائی سیاسی صف بندی کے بعد سے امیت شاہ کا یہ پہلا دورہ بہار ہے۔ گذشتہ برس نتیش کمار نے آر جے ڈی اور کانگریس کا مہا گٹھ بندھن چھوڑکر این ڈی اے میں واپسی کی تھی۔ چیف منسٹر نتیش کمار نے بی جے پی صدر سے سرکاری گیسٹ ہاؤز میں ملاقات کی جہاں دونوں قائدین نے ایک ساتھ ناشتہ کیا۔ انہوں نے 45 منٹ مختلف امور پر بات چیت کی۔ اس موقع پر بی جے پی کے کئی سینئر قائدین بھی موجود تھے۔ امیت شاہ کے ایرپورٹ سے پہنچنے کے اندرون چند منٹ نتیش کمار گیسٹ ہاؤز پہنچ گئے۔ باب الداخلہ پر بی جے پی کے قومی جنرل سکریٹری و انچارج بہار بھوپیندر یادو نے ان کا خیرمقدم کیا اور انہیں اس کمرہ میں لے گئے جہاں امیت شاہ موجود تھے۔ عام طورپر سنجیدہ دکھائی دینے والے نتیش کمار کے چہرہ پر مسکراہٹ تھی۔ ناشتہ میٹنگ ختم ہوتے ہی امیت شاہ اور بی جے پی کے دیگر بڑے قائدین مرکزی وزرا روی شنکر پرساد‘ رادھا موہن سنگھ اور رام کرپال یادو ‘ نتیش کمار کو ان کی کار تک چھوڑنے آئے۔ نتیش کمار نے میڈیا کے کسی سوال کا جواب نہیں دیا لیکن سرکاری گیسٹ ہاؤز سے ان کا مسکراتے ہوئے باہر آنا یہ بتانے کے لئے کافی تھا کہ این ڈی اے میں سب کچھ ٹھیک ہے۔ سال 2010میں نتیش کمار نے بی جے پی قائدین کو دیا جانے والا ڈنر منسوخ کردیا تھا۔ مقامی اخبارات میں اُس وقت کے چیف منسٹر گجرات نریندر مودی سے مصافحہ کرتی ان کی تصویر شائع ہوتے ہی انہوں نے یہ ڈنر منسوخ کردیا تھا۔

جواب چھوڑیں