کلبھوشن جادھو کیس‘ پاکستان 17جولائی کو جواب داخل کرے گا

ہندوستانی شہری کلبھوشن جادھو کے معاملہ میں پاکستان بین الاقوامی عدالت (آئی سی جے) میں 17 جولائی کو ہندوستان کا جواب داخل کرے گا۔ جادھو کو جاسوسی اور دہشت گردی کے الزام میں پاکستان کی فوجی عدالت نے سزائے موت سنائی ہے۔ بین الاقوامی عدالت نے 23 جنوری کو پاکستان اور ہندوستان کو مہلت دی تھی کہ وہ اس کیس میں ایک اور جواب داخل کریں۔ پاکستان‘ دی ہیگ (نیدرلینڈ) کی بین الاقوامی عدالت میں ہندوستان کے 17 اپریل کو داخل کردہ کاغذات کا جواب داخل کرے گا۔ اٹارنی جنرل خاور قریشی نے جنہوں نے ابتدا میں پاکستان کا کیس لڑا تھا‘ نگراں وزیراعظم ناصرالملک کو گذشتہ ہفتہ کیس کی جانکاری دی۔ ایکسپریس ٹریبون نے یہ اطلاع دی ہے۔ اخبار کے بموجب جواب خاور قریشی نے تیار کیا ہے۔ بین الاقوامی مقدموں کے ایک ماہر وکیل نے پاکستانی اخبار کو بتایا کہ کیس کی جاریہ سال سماعت کا کوئی امکان نہیں۔ جادھو کیس کی لسٹنگ آئندہ سال گرما میں ہوگی۔ ہندوستان نے گذشتہ برس مئی میں آئی سی جے سے رجوع کیا تھا ۔48 سالہ جادھو کو سزا سنائے جانے کے بعد ہندوستان نے یہ اقدام کیا تھا۔ آئی سی جے کی 10 رکنی بنچ نے 18 مئی کو پاکستان کو روک دیا تھا کہ وہ کیس کی یکسوئی تک جادھو کو سزا نہ دے۔ پاکستان نے کہا تھا کہ ہندوستان نے تردید نہیں کی ہے کہ جادھو ایک فرضی مسلمان نام کے پاسپورٹ پر سفر کررہا تھا۔ ہندوستان یہ وضاحت نہیں کرسکا کہ بحریہ کا برسرخدمت کمانڈر فرضی نام سے کیوں سفر کررہا تھا۔ یہ ظاہر ہے کہ وہ کسی مخصوص مشن پر بھیجا گیا جاسوس تھا۔

جواب چھوڑیں