فیچر فلم :اجئے دیوگن افسانوی فٹبال کوچ سید عبدالرحیم کے کردارمیں

اداکار اجئے دیوگن عنقریب افسانوی فٹ بال کوچ سید عبدالرحیم کی زندگی کو فلم کی شکل میں بڑے پردے پر دوبارہ زندہ کریں گے۔ مرحوم رحیم صاحب حیدرآباد کے سپوت ہیں 1950 تا 1963ء ہندوستانی فٹ بال ٹیم کے کوچ اور مینجر تھے۔ ان ہی کی رہنمائی و سرپرستی میں ہندوستانی فٹ بال ٹیم نے پہلی مرتبہ 1951کے ایشین گیمس میں گولڈ میڈل حاصل کی تھی ‘پھر 1962ء کے ایشین گیمس میں گولڈ میڈل جیتا اور انہوں نے اپنی ٹیم کو 1956ء کے ملبورن اولمپکس کے سیمی فائنل تک بھی پہنچایا تھا۔ واضح رہے کہ مرحوم رحیم صاحب انڈین فٹبال ٹیم کواولمپک نقشہ میں1952 کے علاوہ 1956 اور 1960 میں شامل کروائے تھے۔ 54سال کی عمر میں کینسر سے ان کا انتقال ہوا تھا۔ ان کی وفات کے بعدانڈین فٹبال ٹیم نہ ایشیائی کھیلوںمیں میڈل حاصل کی اور نہ ہی اولمپک مقابلوںکا حصہ بنی۔فلم کے زی اسٹوڈیوز، بونی کپور، آکاش چائولہ اور جوائے سین گپتا ہوں گے اور امیت شرما اپنی ہدایت کاری سے سجائیں گے ۔ فلم کا ابھی نام نہیں دیا گیا۔ اسکرین پلے اور مکالے سیون قادروس اور رتیش شاہ کے ہوں گے۔ بونی نے کہا کہ ’’یہ دیکھنا حیرت انگیز ہے کہ دنیا کا سب سے بڑا کھیل فٹ بال کا ہندوستان میں اتنا بخار ہے اور پھر بھی ہماری ٹیم اہم ٹورنمنٹس میں نہیں بھیجی جاتی۔ جب میرے شراکت داروں آکاش چائولہ اور جوائے سین گپتا نے سید عبدالرحیم کی حقیقی کہانی مجھے سنائی تو میں حیرت میں پڑگیا کہ اس گمنام ہیرو اور اُس عظیم ٹیم کی حصولیابیوں سے میں واقف تک نہیں تھا جس کا حصہ چنی گوسوامی، پی کے بنرجی، بلرام، فرانکو، ارون گھوش جیسے کھلاڑی تھے۔یہاں اس بات کا اظہاربیجانہ ہوگاکہ ان کے اس عظیم کارناموںپر بعدازمرگ کوئی ایوارڈ نہیں دیاگیا نہ ہی ان کی زندگی پرانڈین فٹبال فیڈریشن یا پھر ریاستی فٹبال اسوسی ایشن تفصیلات جمع کرنے سے قاصر رہی۔ یہی نہیں ان کی زندگی پرڈاکیومنٹری یا پھر فیچر فلم بنائی جاسکتی تھی۔ مرحوم رحیم صاحب محکمہ پولیس میں اعلی عہدہ پر فائز تھے اس سے قبل وہ تدریسی شعبہ سے وابستہ تھے۔ ان کی ٹریننگ میں آندھراپردیش پولیس ملک کی صف اول کی ٹیموںمیں شمار کی جاتی تھی۔ ان کی عقابی نظر نے حیدرآباد سے 8اولمپئنس کوروشناس کیا جن میںسید خواجہ معین الدین، عزیز الدین ،یوسف خان، ذوالفقار الدین،ایس ایس حکیم،ایس ایچ ایچ حامد،بلرام،کنن اور دیگر شامل ہیں ۔ ان کے انتقال کے بعد انڈین فٹبال ٹیم کی صحیح رہنمائی کرنے والاآج تک دستیاب نہیں ہوا۔

جواب چھوڑیں