لندن میں نواز شریف کے دو نواسے گرفتار۔ رہائش گاہ کے باہر احتجاجیوں کو زدوکوب کا الزام

پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے نواسوں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ یہ بات میٹرو پولیٹن پولیس نے بتائی اور کہا کہ نواسوں کو اس وقت گرفتار کرلیا گیا جبکہ یہ شکایت کی گئی ہے کہ انہوں نے ان کے مکان کے باہر احتجاج کرنے والوں کو زدوکوب کیا۔ ڈائون لائن کے مطابق ابتدائی رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ نواز شریف (پی ایم ایل۔این) کے مخالفین اور حریف یہاں ایونفیلڈ ریسیڈنس کے باہر جمع ہوگئے اور ایک احتجاجی کے تعلق سے بتایا گیا ہے کہ اس نے نواز شریف کے نواسوں جنید صفدر اور ذکریہ حسین پر طنز کیا جس کی وجہ سے وہ بے قابو ہوکر مکے مارنا شروع کردئیے۔ مریم نواز کے فرزند جنید صفدر نے ادعا کیا کہ احتجاجی جو کہ ان کی رہائش گاہ کے باہر کیمپ کئے ہوئے ہیں اشتعال انگیزی کر رہے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ چند دنوں سے ان کی رہائش گاہ کے باہر احتجاج کیا جارہا ہے اور ان پر حملوں کی کوشش بھی کی گئی۔ مریم نواز نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کے ورکرس لندن میں واقع ان کے فلیٹ کے روبرو جمع ہوگئے اور نعرے بلند کرنے لگے۔ اس طرح کے عمل کے بعد ہر شخص مشتعل ہوجائے گا۔ جیونیوز کی جانب سے حاصل کردہ ایک ویڈیو میں بتایا گیا ہے کہ ایک احتجاجی دو نوجوان جنید صفدر اور ذکریہ حسین پر حملہ کی کوشش کر رہا ہے اور جنید بچنے کی تدابیر اختیار کرتے جارہا ہے۔ آخر کار دونوں میں دھکم پیل شروع ہوگئی۔ اس موقع پر برطانیہ کی پولیس پہنچ گئی۔ حکام نے کہا کہ جونیر صفدر کو نوجوان شخص کو مکے مارنے کے الزام میں تحویل میں لے لیا گیا ہے۔ حکام نے اس بات کی بھی توثیق کی کہ حسین نواز کے فرزند ذکریہ کو بھی گرفتار کرلیا گیا تھا۔ زخمی شخص کا تعلق پاکستان سے ہے۔ پولیس نے یہ بات بتائی۔ قبل ازیں بتایا جاتا ہے کہ شریف کے اپارٹمنٹ پر حملہ کی بھی کوششیں کی گئیں۔

جواب چھوڑیں