مشن تلنگانہ‘ بی جے پی کا نشانہ۔امیت شاہ کی پارٹی قائدین اور ورکروں کے ساتھ بندکمرہ میں بات چیت

بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ، تنظیمی دورہ پر آج شہر پہنچے۔ ان کے دورہ کا مقصد تلنگانہ میں پارٹی کی انتخابی تیاریوں اور روڈ میاپ کو قطعیت دینا ہے۔ شاہ نے بندکمرہ میں پارٹی قائدین کے ساتھ مشاورت کی۔ انہوں نے پارٹی کے کل وقتی کارکنوں سے بھی بات چیت کی۔ پارٹی کے جنرل سکریٹریز سامبامورتی اور برہمانندا ریڈی نے امیت شاہ کے دورہ اور پارٹی کارکنوں اور قائدین سے ملاقات کی تفصیلات سے میڈیا کو واقف کراتے ہوئے کہا کہ ’’مشن تلنگانہ‘‘ ہمارا ٹارگٹ ہے۔ امیت شاہ انتخابات کی تیاریوں کے بارے میں چند تجاویز پیش کیں جس میںکہاگیا حکمراں جماعت ٹی آرایس کی بدعنوانیوں ۔اسکام اور خاندانی حکمرانی کو عوام کی دہلیز پر لے جایاجاناچاہئیے۔ انہوں نے ریاست میں لوک سبھا کی 17نشستوں اور اسمبلی کی 119 نشستوں پرکامیابی کے لئے لائحہ عمل تیارکرنے کی ہدایت دی۔ امیت شاہ نے پارٹی کیڈر کو دیہی مقامات سے شہروں تک پارٹی کی کامیابی کا احاطہ کرنے ‘حکمراں جماعت کے خلاف آواز بلند کرنے کے ساتھ ساتھ دھرنا اور دیگراحتجاجی پروگرامس منظم کرنے کا مشورہ دیا۔ ان قائدین نے کہا کہ امیت شاہ نے ہرپارلیمنٹ حلقہ کے لئے ایک ٹیم انچارج کے علاوہ بوتھ سطح پر کیڈرکومستحکم کرنے کی ہدایت دی۔ ریاستی بی جے پی کی جانب سے ‘امیت شاہ کی تجاویز ومشوروں پر عمل آوری کرتے ہوئے جولائی کے آخری ہفتہ سے حکومت کے خلاف احتجاج، دھرنا منظم کیاجائے گا کیونکہ ٹی آرایس حکومت عوام کی بہبود کو نظرانداز کرتے ہوئے بدعنوانیوں میںملوث ہوچکی ہے۔ ان قائدین نے کہا کہ شاہ نے قبل ازوقت پارلیمنٹ واسمبلی انتخابات کا کوئی اشارہ نہیں دیا۔دلچسپ بات یہ ہے کہ امیت شاہ کے دورہ حیدرآباد کے شیڈول سے میڈیا کو دور رکھاگیا ۔ میڈیا کے نمائندوں کو پارٹی دفتر میں داخل ہونے نہیں دیاگیا۔ بارش کے سبب مجبوراً میڈیا کے نمائندوں کو صرف ہال میں داخلہ کی اجازت دی گئی جبکہ امیت شاہ کے ساتھ پارٹی کیڈر کا اجلاس دفتر کی دوسری منزل پر جاری تھا۔

جواب چھوڑیں