پی ڈی پی کو توڑنے کے خوفناک نتائج برآمد ہوں گے۔محبوبہ مفتی کا دہلی کو انتباہ

سابق چیف منسٹر جموں وکشمیر اور پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کی صدر محبوبہ مفتی نے آج کہا کہ اگر ریاست میں تشکیل حکومت کی خاطر ان کی پارٹی کو توڑا گیا تو بی جے پی زیرقیادت مرکزی حکومت سید صلاح الدین اور یٰسین ملک جیسے مزید عسکریت پسند پیدا کرے گی۔ محبوبہ مفتی نے یہاں میڈیا کو بتایا کہ ہم سب اس بات سے واقف ہیں کہ جب تک دہلی نہ چاہے کوئی سودے بازی نہیں ہوسکتی۔ اگر دہلی میری پارٹی کو توڑنے کی کوشش کرے تو وہ یہاں اسی چیز کا اعادہ کریں گے جو 1987 میں ہوا تھا ۔ میری پارٹی کو توڑنے کی کوشش نہ کریں۔ اگر آپ ایسا کریں گے تو صلاح الدین(حزب المجاہدین کے صدر جنہوں نے 1987 میں انتخابات میں مقابلہ کیا تھا) اور یٰسین ملک (جے کے ایل ایف صدر جو اُس وقت صلاح الدین کے پولنگ ایجنٹ تھے) جیسے مزید عسکریت پسند پیدا کریں گے۔ پارٹی میں دراڑ کے بارے میں سوال پر جس کے نتیجہ میں خود ان کی پارٹی کے چند کارکن اور ارکان اسمبلی نے ان کے خلاف سنگین الزامات عائد کئے ہیں‘ محبوبہ مفتی نے کہا کہ ہر پارٹی میں اختلافات ہوتے ہیں اور انہیں پارٹی کے اندر حل کیا جاسکتا ہے۔ ان کے پیشرو اور نیشنل کانفرنس کے لیڈر عمر عبداللہ نے محبوبہ مفتی کی وارننگ کا مذاق اڑایا۔ انہوں نے کہا مجھے یہاں بتانے دیں کہ پی ڈی پی کے ٹوٹنے سے ایک بھی نیا عسکریت پسند پیدا نہیں ہوگا۔ عوام ایک ایسی پارٹی کی موت کا سوگ نہیں منائیں گے جو دہلی میں تخلیق کی گئی تھی تاکہ کشمیریوں کے ووٹ تقسیم کئے جاسکیں۔

جواب چھوڑیں