پارلیمنٹ کے بجٹ سیشن کا کل سے آغاز

چونکہ پارلیمنٹ کا مانسون سیشن 18جولائی سے شروع ہونے والا ہے۔ حکومت نے آج اپوزیشن سے اپیل کی کہ وہ دونوں ایوانوں کو پُرسکون انداز میں چلانے کیلئے تعاون کرے۔ باخبر ذرائع نے بتایاکہ مرکزی مملکتی وزیر پارلیمانی امور وجئے گوئل نے اپوزیشن جماعتوں کے قائدین سے جن میں سماج وادی پارٹی لیڈر رام گوپال یادو‘ بی ایس پی قائد ستیش چندر مشرا‘ شیوسینا لیڈر سنجے راوت اور سی پی آئی قائد ٹی راجہ بھی شامل تھے ملاقات کی۔ اُنہوںنے کہاکہ وزیر موصوف نے ساتھ ہی ساتھ ٹی آرایس ‘ بیجوجنتا دل اور دیگر جماعتوں کے قائدین سے ملاقات کی ۔ سیاسی قائدین کے ساتھ اپنی بات چیت کے دوران گوئل نے اُن سے درخواست کی کہ وہ لوک سبھا اور راجیہ سبھا کی کارروائی کو پُرسکون انداز میں چلانے کیلئے تعاون کریں۔ ذرائع کے بموجب اُنہوںنے بتایاکہ حکمران اور اپوزیشن جماعتوں کی یہ قومی ذمہ داری ہے کہ وہ کوئی رکاوٹوں کے بغیر پارلیمنٹ کی کارروائی کو یقینی بنائیں۔ ذرائع نے وضاحت کی کہ مرکزی وزیر نے ساتھ ہی ساتھ قومی مفاد کے مسودہ جات قانون پر گفتگو کی جو یا تو معرض التواء ہیں یا جن کو آئندہ اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔ علاوہ ازیں اُنہوںنے اِس سے پہلے سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ سے ملاقات کی اور اُن سے خواہش کی کہ پارلیمنٹ کے اجلاس کو کامیابی کے ساتھ چلانے کیلئے کانگریس کی جانب سے تعاون کیا جائے۔ اسی دوران حکومت کی جانب سے 17جولائی کو کُل جماعتی قائدین کا اجلاس طلب کیا گیا ہے جس میں مانسون سیشن کو موثر طورپر چلانے کیلئے تمام جماعتوں کی آراء حاصل کی جائے گی۔ پارلیمنٹ کا مانسون سیشن 18جولائی سے شروع ہوگا اور 10اگست کو اختتام کو پہنچے گا۔

جواب چھوڑیں