ہجومی حملہ میں شہید‘اعظم کے خاندان کوکانگریس قائدین کاپرسہ

صدر پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی ، قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر، سابق وزیر داخلہ سبیتا اندرا ریڈی اور سابق پی سی سی صدر وی ہنمنت راؤ نے آج ایرا کنٹہ بارکس پہنچ کر بیدر میں ہجوم کے حملہ میں شہید محمد اعظم کے غمزہ ارکان خاندان کو پرسہ دیا اور مرحوم کے والد محمد عثمان کو تلنگانہ کانگریس کی جانب سے ڈھائی لاکھ روپے، کے مالی امداد کا چیک حوالے کیا ۔ اتم کمار ریڈی نے مرحوم محمد اعظم کے والد کو بتایا کہ صدر کانگریس راہول گاندھی نے انہیں نئی دہلی سے ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے بتایاکہ بیدر میں سوشل میڈیا پر افواہوں کی بنیاد پر ہجوم کے حملہ میں محمد اعظم کی ہلاکت پر انہیں گہرا رنج وملال ہوا ہے۔ وہ اس واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ آئندہ سال انتخابات کے پیش نظر بعض منفی سوچ رکھنے والے سوشل میڈیا کا غلط استعمال کرتے ہوئے سماج میں نفرت پھیلا رہے ہیں جنہیں بہت جلد بے نقاب کرنے کی ضرورت ہے ۔ راہول گاندھی نے مکتوب میں اتم کمار ریڈی کو ہدایت دی ہے کہ وہ محمد اعظم کے افراد خاندان کی ممکنہ مدد کریں۔اورکرناٹک میں پیش آئے اس طرح کے بدبختانہ واقعات کوتلنگانہ میں روکنے کے لئے ضروری اقدامات کریں۔اس موقع پر جاں بحق محمد اعظم کے والد نے اتم کمار کو بیدر میں گذشتہ جمعہ کو پیش آئے واقعہ کی تفصیلات سے واقف کروایا اور کہا کہ ان کا لڑکا محمد اعظم ایک ہمدرد ، تعلیم یافتہ اور سافٹ ویر انجینئر تھا ۔ وہ اپنے رشتہ کے بھائیوں کے ساتھ جن میں قطر کے شہری سلہام بھی شامل ہیں، بیدر میں رشتہ داروں سے ملاقات کرنے اور وہاں مستحق خاندان کی مدد کرنے کیلئے گئے تھے ۔ واپسی میں یہ نوجوان اسکولی بچوںمیں چاکلیٹ تقسیم کئے ۔ اس دوران اشرار پر مشتمل ہجوم جو ہتھیاروں سے لیس تھا ان پر امنڈ پڑا اور ان نوجوانوں کو کار سے اتار کر شدید زدو کوب کیا جس کے نتیجہ میں محمد اعظم شہید ہوگئے۔بعدازاں میڈیا سے بات کرتے ہوئے اتم کمار ریڈی نے کہا کہ وہ چیف منسٹر کرناٹک کمارا سوامی سے ربط پیدا کرتے ہوئے محمد اعظم اور ان کے ساتھیوں پر حملہ میں ملوث افراد کیخلاف سخت کاروائی کرنے اور فاسٹ ٹریک کورٹ میں ان کے خلاف مقدمہ دائر کرتے ہوئے جلد سے جلد سزاء دلانے کا مطالبہ کریں گے ۔ انہوںنے کہا کہ مہلوک محمد اعظم کے لڑکے‘ جن کی عمر دیڑھ سال ہے ، مستقبل میں اس لڑکے کے تعلیمی اخراجات کانگریس پارٹی کی جانب سے برداشت کئے جائیں گے ۔ اس کے علاوہ خاندان کے دیگر افراد کی بھی ممکنہ مدد کی جائے گی ۔ انہوںنے کہاکہ وہ حملہ میں زخمی نوجوانوں کی بھی مالی امداد اور علاج کے اخراجات کی پابجائی کیلئے حکومت کرناٹک سے نمائندگی کریں گے ۔ قائد اپوزیشن محمد علی شبیر نے کہا کہ محمد اعظم اور ان کے ساتھی جو مستحقین کی مدد کی نیت سے بیدر گئے تھے، لیکن افسوس کہ اشرار پر مشتمل ہجوم نے افواہوں کی بنیاد پر ان پر حملہ کیا جس میں اعظم شہید ہوگئے ۔ اس واقعہ پر انہیں اور کانگریس قائدین بالخصوص راہول گاندھی کو گہرا صدمہ ہوا ۔ اس واقعہ کی ہم سب شدید مذمت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کی جانب سے دی جانے والی مالی امداد اعظم کی موت کے سامنے انتہائی معمولی ہے ۔ محمد علی شبیر نے کہا کہ بی جے پی جب سے مرکز میں برسر اقتدار آئی ہے تب سے ملک میں نفرت اور نراج کا ماحول پیدا کیا جارہا ہے ۔ بالخصوص اقلیتوں کو قتل کیا جارہا ہے۔راہول گاندھی کی فکر وسوچ ہم سب کے لئے قابل عمل ہے جنہوںنے نئی دہلی سے ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے مرحوم نوجوان کے مکان پہنچ کر ارکان خاندان کو پرسہ دینے کی ہدایت دی ہے اور خودراہول نے اس واقعہ پرگہرے رنج کا اظہار کیاہے۔ محمد علی شبیر نے ٹی آر ایس حکومت پر بھی تنقید کی جنہوں نے اس واقعہ پر کسی ردعمل کا اظہارنہیں کیا اور نہ ہی ارکان خاندان سے ملاقات کرکے انہیں پرسہ دیا۔ وی ہنمنت رائو نے کہا کہ انہوں نے صدر کانگریس کرناٹک ایشور کھنڈرے سے بات چیت کی ہے۔ ایشور کھنڈر نے کرناٹک پی سی سی کی جانب سے مرحوم اعظم کے ورثاء کو 2.5 لاکھ روپے مالی امداد دینے کا تیقن دیا۔

جواب چھوڑیں