بارش کے دوران عوام کو درپیش مسائل فوری حل کریں

پرنسپل سکریٹری محکمہ بلدی نظم ونسق و شہری ترقیات ارویند کمار نے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے عہدیداروں کوہدایت دی کہ وہ شہر میں بارش سے عوام کو درپیش مسائل فوری حل کریں ۔ بارش سے شہر یان کو پانی جمع ہونے ، گڈھوں، ڈرین ابل پڑنے اور ملبہ کی عدم صفائی سے مسائل کا سامنا رہتا ہے ۔ ان تمام مسائل کو ترجیحی اساس پر حل کرنا جی ایچ ایم سی عہدیداروں کی ذمہ داری ہے ۔ پرنسپل سکریٹری کمار نے جی ایچ ایم سی کے اعلیٰ عہدیداروں بشمول کمشنر بی جنا ردھن ریڈی، چیف انجینئر ضیاء الدین، زونل کمشنر شنکر یا اور دیگر کا ایک جائزہ اجلاس طلب کیا ۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ارویند کمار نے کہا کہ دو ماہ کے اندر شہر میں350 کیلو میٹر طویل فٹ پاتھس تعمیر کئے جائیں گے ۔ فٹ پاتھس کی تنصیب کے بعد ان پر غیر مجاز قبضوں کو روکنا عہدیداروں کی ذمہ داری رہے گی ۔ انہوںنے کوکٹ پلی زون میں شروع کردہ کاموں کا جائزہ لیا اور زونل کمشنر اور دیگر عہدیداروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ روزانہ کی اساس پر کاموں کا معائنہ کرتے رہیں اور غیر محفوظ وخطرناک مقامات کی نشاندہی کریں اور ان مقامات کو ٹریفک کے لئے سہل بنانے کیلئے فوری اقدامات کریں ۔ انہوںنے اسسٹنٹ انجینئروں پر زور دیا کہ وہ کم از کم 4 وارڈس کے سطح کا اجلاس منعقد کریں جس میں مقامی افراد کے ساتھ ساتھ ویلفیر اسوسی ایشنوں کے ارکان کو مدعو کریں اور یہ کام اندرون2یوم شروع کیا جانا چاہئے ۔ اس اجلاس میں عوام کو درپیش مسائل سے واقفیت حاصل کریں ۔ اس ٹیم میں واٹر ورکس کے منیجرس، ٹریفک پولیس اور صفائی عملہ کو شامل ہونا چاہئے۔ انہوںنے جی ایچ ایم سی کے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ بارش کے سیزن میں عوام کو درپیش مسائل حل کرنے کے اقدامات کریں ۔ ارویند کمار نے مزید کہا کہ عوام سے مشاورت کے دوران منظر عام پر آنے والے عوامی مسائل کو آئندہ ہفتہ تک حل کیا جانا چاہئے ۔ انہوںنے عہدیداروں کو ٹویٹر اکاونٹ کو اوپن کرتے ہوئے ملبہ، ڈرین کی صفائی اور دیگر مربوط کاموں کی تفصیلات ،اپ لوڈ کرنے کی ہدایت دی ٹویٹر اکاونٹ پر صفائی سے قبل اور صفائی کے بعد والی تصاویر کو پیش کرنا چاہئے ۔ پرنسپل سکریٹری بلدی نظم ونسق وشہری ترقیات ارویند کمار نے کام کے مقامات پر تمام عہدیداروں کو جی ایچ ایم سی جیکٹ پہننے کی ہدایت دی تاکہ عوام کو پتہ چلے کہ بلدی عملہ ، کاموں میں مصروف ہے ۔ انہوںنے درختوں کی شاخوں کی قطع و برید کیلئے خصوصی مہم چلانے کی ہدایت دی اور کہا کہ ایسے درختوں کی شاخوں کو کاٹاجائے جو سڑک پر چلنے والوں کیلئے نقصان دہ ثابت ہوسکتے ہیں۔

جواب چھوڑیں