ورلڈ کپ کھیلنا ہے تو دھونی کو اپنا کھیل بدلنا ہو گا: گنگولی

انگلینڈ کی ونڈے اور ٹی 20 سیریز میں وکٹ کیپر ایم ایس دھونی کی بلے بازی سوالات کی زد میں آگئی ہے۔ دھونی نے اس دورہ پر 3 اننگز میں بلے بازی کی اور ٹیم انڈیا کو تینوں ہی بار شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ لارڈس ونڈے کے دوران تو ان کی بیٹنگ کے وقت ناظرین نے ہوٹنگ تک کر ڈالی۔ دراصل، دھونی رن ریٹ کے اعتبار سے کافی سست بلے بازی کر رہے تھے جس کی وجہ سے ناظرین ناراض ہوگئے۔ دھونی کا کھیل دیکھ کر انہیں ٹیم انڈیا میں لانے والے سابق کپتان سورو گنگولی بھی مایوس ہیں۔ گنگولی نے ونڈے سیریز ہارنے کے بعد واضح طورپر کہاکہ اگر دھونی ورلڈکپ کی ٹیم میں ہوں گے تو پھر انہیں اپنا کھیل بدلنا ہوگا۔ گنگولی نے اپنے دو بہترین بلے بازوں لوکیش راہل اور اجنکیا رہانے کا صحیح طریقہ سے خیال نہیں رکھنے کیلئے بھی ٹیم انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ گنگولی نے کہاکہ مڈل آرڈر میں مسلسل استعمال سے مضبوط ٹاپ آرڈر والی ہندوستانی ٹیم کو نقصان اٹھانا پڑرہا ہے۔ لیڈس میں انگلینڈ کے خلاف تیسرے اور آخری ونڈے میں ہندوستان کی شکست کے بعد گنگولی نے کہاکہ ٹیم ٹاپ کے 3 بلے بازوں شکھر دھون، روہت شرما اور کوہلی پر کچھ زیادہ ہی منحصر ہے۔ گنگولی نے کہاکہ ہندوستان راہول جیسے کھلاڑیوں کو زیادہ موقع نہیں دے رہاہے جنہیں اچھی فارم میں ہونے کے باوجود آخری میچ میں موقع نہیں دیا گیا۔ انہوں نے کہاکہ اگر میں آنکھیں بند کرکے دیکھوں تو مجھے چوتھے نمبر پر راہل نظر آتاہے۔ واضح رہے کہ انگلینڈ کے خلاف ونڈے سیریز کے بعد دھونی کی ریٹائرمنٹ سے متعلق افواہیں گردش کررہی ہیں۔ میچ کے بعد دھونی کو کچھ ایسا کرتے ہوئے دیکھا گیا جس نے پورے سوشل میڈیا پر سنسنی پھیلا دی ۔ عام طورپر اگر کوئی گیند باز بہترین گیند بازی کرتا ہے یا کوئی بلے باز اچھا کھیلتاہے تو وہ یادگار طورپر گیند اپنے پاس رکھ لیتا ہے، لیکن انگینڈ کے خلاف آخری ایک روزہ میچ میں الگ ہی نظارہ دیکھنے کو ملا۔ دراصل میچ ختم ہونے کے بعد دھونی نے امپائر سے گیند مانگی۔ بس اتنا دیکھتے ہی مداح کو لگ رہاہے کہ ہار کے بعد ماہی کوئی بڑا قدم اٹھانے جارہے ہیں اور یہ ان کا آخری میچ ہوسکتاہے۔ واضح رہے کہ انگلینڈ کی حارجانہ گیند بازی کی وجہ سے ٹیم انڈیا 8 وکٹ گنواکر 256 رن ہی بناسکی اور انگلینڈ نے یہ نشانہ 44.3 اوورس میں 2 وکٹس گنواکر حاصل کرلیا۔اسی دوران ٹیم انڈیا کے ہیڈکوچ روی شاستری نے دھونی کی سبکدوشی سے متعلق افواہوں کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ وہ ورلڈکپ ٹیم کا حصہ ضرور رہیںگے۔

جواب چھوڑیں