مہیلا کانگریس‘ طلاقِ ثلاثہ بل کی مشروط تائید پر آمادہ

 کانگریس مہیلا مورچہ کی صدر نے کہا ہے کہ ان کی پارٹی طلاقِ ثلاثہ بل کی تائید کرے گی بشرطیکہ مرکز اس میں نان ونفقہ کی گنجائش نکالے۔ آل انڈیا مہیلا کانگریس کی صدر سشمیتا دیو نے الزام عائد کیاکہ حکومت مسلم ویمن بل کی تائید کے بدلے خواتین تحفظات منظورکراناچاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے طلاقِ ثلاثہ بل کی مخالفت کبھی نہیں کی لیکن اس کی موجودہ شکل مسلم خواتین کے مفادات کے لئے نقصان دہ ہے۔ اس میں متاثرہ کونان ونفقہ کی گنجائش نکالنی چاہئیے۔ شوہر جیل چلاجائے تو عورت کا گذارہ کیسے ہوگا؟۔ مسلم ویمن بل لوک سبھا میں منظور ہوچکا ہے لیکن راجیہ سبھا میں لٹکا ہوا ہے۔گذشتہ پیر کو کانگریس صدر راہول گاندھی نے وزیراعظم مودی کو لکھاتھا کہ وہ پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس میں خواتین تحفظات بل کی منظوری یقینی بنائیں۔ ایک دن بعد مرکزی وزیر قانون روی شنکر پرساد نے ’ایک معاملت‘ والا جواب بھییجاتھا کہ ہم خواتین تحفظات بل منظورکرادیں گے آپ مسلم ویمن بل کی تائید کردیں۔ سشمیتا دیو نے کہا کہ حکومت’ ڈیل‘ کررہی ہے۔ کیا بی جے پی نے اپنے منشور میں کہاتھا کہ وہ دو لوک بل ایک ساتھ منظورکرائے گی۔

جواب چھوڑیں