نریندرمودی سے راہول کے بغلگیر ہونے پر عمر عبداللہ کی تنقید

 صدرکانگریس کی جانب سے وزیر اعظم نریندرمودی کے ساتھ غیر ضروری طورپر بغلگیر ہونے کے اقدام پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے جموں وکشمیر کے سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ نے بتایاکہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ راہول گاندھی‘ کے خیال پر نریندرمودی کا غلبہ رہا ہے۔ عام طورپر 24گھنٹے بعد ہم اُن امورپر تبادلہ خیال کرتے ہیں جن کی ملک کیلئے حقیقی اہمیت ہوتی ہے۔ نیشنل کانفرنس کے نائب صدر(این سی) نے مائیکروبلاگنگ سائٹ ٹوئیٹر پر یہ پیام جاری کیا۔ ہفتہ کو نریندرمودی نے پارلیمنٹ میں راہول گاندھی کی جانب سے غیر ضروری طورپر اُنہیں گلے لگانے پر تنقید کی تھی اور بتایاتھاکہ بی جے پی کیخلاف متعدد پارٹیوں کے اتحاد سے صرف کنول کھلنے میں مدد ملے گی۔ مودی اپوزیشن کی تائیدی تحریک عدم اعتماد کا حوالہ دے رہے تھے جسے جمعہ کو لوک سبھا میں ٹی ڈی پی نے پیش کیا تھا۔ جمعہ کو لوک سبھا میں اپنی تقریر میں اختتام کے بعد راہول گاندھی اپوزیشن کی نشستوں سے اٹھ کر وزیر اعظم کے پاس پہنچے اور اُن سے بغلگیر ہوگئے تھے۔

جواب چھوڑیں