کانتی ویلگو‘ پروگرام کا15؍اگست سے آغاز: کے سی آر

ریاست کے عوام کی آنکھوں کی صحت کو یقینی بنانے کیلئے ’’کانتی ویلگو‘‘ پروگرام آئندہ ماہ سے شروع کیا جائے گا ۔ توقع ہے کہ اس منفرد پروگرام کا افتتاح 15 ؍اگست کو حلقہ اسمبلی گجویل کے کسی ایک موضع میں چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کریں گے ۔ ریاستی گورنر ای ایس ایل نرسمہن سے بھی خواہش کی گئی ہے کہ وہ کسی بھی اپنے پسند کے مقام سے اس’’ کانتی ویلگو‘‘ پروگرام کا بیک وقت آغاز کریں۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ تمام ریاستی وزرا، ارکان پارلیمنٹ اور اسمبلی وکونسل سے کہا گیا ہے کہ وہ 15؍ اگست کو اپنے مقامات پر ’’ کانتی ویلگو‘‘ پروگرام کا آغاز کریں ۔ اس پروگرام کے تحت حکومت نے ریاست کے تمام عوام کے آنکھوں کا مفت چیک اپ کیمپس منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے انہوںنے کہا کہ ریاست کے ہرایک شہری کو اپنے آنکھوں کا مفت چیک اپ کرانے کی سہولت دستیاب کرانا ہوگا اور بعد آئی ٹسٹنگ، عینکیں اور دوائیں بھی مفت تقسیم کی جائیں گی ۔ حتیٰ کہ آئی سرجریز بھی مفت کی جائیں گی۔ اس سلسلہ میں محکمہ صحت وطبابت کو مکمل تیاری کرنے اور ضروری عملہ کو دستیاب کرانا ہوگا۔ علاوہ ازیں محکمہ صحت وطبابت کو ضروری عملہ کی دستیابی، طبی آلات ، گاڑیوں ، دوائیں اور عینکیں دستیاب کرانے اور بڑے پیمانے پر انتظامات کرنا ہوگا ۔ پرگتی بھون میں ’’ کانتی ویلگو‘‘ پروگرام کے سلسلہ میں جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر کے سی آر نے یہ بات کہی ۔ اس اجلاس میں پرنسپل سکریٹری ہیلت شانتا کماری، کمشنر بہبود خاندان و کاٹی ارونا، سی ای او آروگیہ شری مانک راج، ڈائرکٹر پبلک ہیلت سرینواس، سپرنٹنڈنٹ سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل رویندر گوڑ اور دیگر عہدیدار شریک تھے ۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کے چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ حکومت نے پہلی بار ریاست بھر کے3.75کروڑ عوام کی آنکھوں کامفت چک اپ کیمپس منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ بڑے پیمانے پر اب تک اس طرح کا پروگرام منعقد نہیں کیا گیا ۔ ہر ایک عوامی نمائندہ کو اس پروگرام کو کامیابی کے ساتھ ہمکنار کرانا ہوگا ۔ انہوں نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ آئی ٹسٹ کے شیڈول کو قطعیت دیں اور اس سلسلہ میں مناسب تشہیر کریں اور عوام کو کانتی ویلگو پروگرام سے واقف کرائیں۔ تاکہ ہر ایک شہری آنکھوں کا معائنہ کرانے کیلئے قریبی مرکز تک پہنچ پائے ۔عہدیداروں نے چیف منسٹر کو بتایا کہ آئی چیک اپ کیلئے 799 ٹیمیں تشکیل دی جائیں گی ہر ایک ٹیم، ایم بی بی ایس ڈاکٹر پرمشتمل رہے گی ۔ اس ٹیم میں آپٹو میٹر یسٹ، اے این ایم اور دیگر شامل رہیں گے ۔ یہ ٹیم، ایک روز میں کم وبیش 250افراد کے آنکھوں کا معائنہ کرے گی ۔ انہوں نے کے سی آر کو بتایا کہ ضروری آئی ڈراپس، دوائیں اور 34 لاکھ عینکیں تیار رکھی گئی ہیں جنہیں ڈسٹرکٹ ہاسپٹلوں کو روانہ کیا جائے گا ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ ریاست بھر میں سرکاری اور خانگی114 دواخانوں کی نشاندہی کی گئی ہے جہاں ضرورت پڑنے پر مریضوں کی آئی سرجری کی جائے گی ۔ چیف منسٹر نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ تمام آئی کیمپ، پختہ عمارتوں میں منعقد کرنا چاہئے ۔ تاکہ بارش کی صورت میں بھی آنکھوں کے معائنہ کا عمل بلا خلل جاری رہ سکے ۔ انہوںنے کہا کہ عملہ کی عدم دستیابی کی صورت میں بیروزگار ایم بی بی ایس گریجویٹس کی خدمات حاصل کی جاسکتی ہیں۔ انہوںنے ریاستی وزیر صحت ڈاکٹر سی لکشما ریڈی کو ہدایت دی ہے کہ وہ تمام عوامی نمائندوں کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے انہیں آئی کیمپوں میں شرکت کرنے پر زور دیں ۔ انہوںنے مزید کہا کہ حکومت، آئی کیمپوں میں شرکت کرنے والی ٹیم ارکان کو وویک ینڈ دویوم کی تعطیلات منظور کرے گی اور میڈیکل ٹیموں کو ٹرانسپورٹ اور رہائشی کی سہولتیں بھی فراہم کی جائیں گی ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ سروجنی دیوی آئی ہاسپٹل کو نئی عمارتیں اور ضروری وعصری سہولتیں فراہم کی جائیں گی ۔ اس سلسلہ میں انہوںنے عہدیداروں کو منصوبہ بنانے کی ہدایت دی ۔

جواب چھوڑیں