کشمیر میں انکاؤنٹر‘ 3 عسکریت پسند ہلاک

جموں وکشمیر میں ہفتہ کے دن ایک پولیس کانسٹبل کی ہلاکت میں ملوث 3 عسکریت پسند اتوار کے دن ضلع کلگام میں بندوقوں کی لڑائی میں مارے گئے۔ پولیس نے یہ بات بتائی۔ ریاستی پولیس سربراہ ایس پی وید نے کہا کہ مقام انکاؤنٹر سے دہشت گردوں کی 3نعشیں برآمد کرلی گئی ہیں۔ قبل ازیں وید نے اپنے ٹوئٹر پیج پر کہاتھا کہ ہمارے ساتھی محمد سلیم(کلگام) کی ہلاکت میں ملوث دہشت گرد گروپ، خدوانی (کلگام) میں جموں وکشمیر پولیس ؍فوج؍ سی آرپی ایف کے ساتھ انکاؤنٹر میں گھرگیا ہے۔ گھیرا تنگ ہونے پر عسکریت پسندوں نے فائرنگ کردی۔ جمعہ کی شا م ٹرینی کانسٹبل محمد سلیم شاہ کو اس کے مکان سے اغوا کرلیاگیاتھا۔ گولیوں سے چھلنی اس کی نعش ہفتہ کے دن برآمد ہوئی تھی۔ وہ چھٹی پر اپنے گھر آیاہوا تھا۔پی ٹی آئی کے بموجب سیکیوریٹی فورسس کی مرکوز کوششوں کے نتیجہ میں کانسٹبل سلیم شاہ کے اغوا اور ہلاکت کا اہم ملزم ماراگیا۔ پولیس ترجمان نے بتایاکہ ضبط کردہ قابل اعتراض مواد سے مہلوک عسکریت پسندوں ی شناخت معاویہ (پاکستانی نژاد غیرملکی) سہیل احمد(کشمیری) اور مدثر عرف ریحان(کشمیری) کی حیثیت سے ہوئی ہے۔ پولیس ریکارڈ کے مطابق یہ ممنوعہ لشکرطیبہ (ایل ای ٹی) اور حزب المجاہدین (ایچ ایم) سے وابستہ تھے۔ مقام انکاؤنٹر سے 12اے کے 47 رائفل اور کاربائن کے علاوہ دوسرا اسلحہ اور گولہ بارود برآمد ہوا۔

جواب چھوڑیں