رافیل معاملت :وزیر اعظم اور وزیر دفاع نے پارلیمنٹ کو گمراہ کیا : کانگریس

وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر دفاع نرملا سیتا رامن پر رافیل لڑاکا طیاروں کی معاملت پر پارلیمنٹ کو گمراہ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کانگریس نے آج کہا کہ اس معاملت میں ایک بڑا اسکام (پوشیدہ) ہے۔ سینئر کانگریس قائد اور سابق وزیر دفاع اے کے انٹونی ، اے آئی سی سی کے سینئر ترجمان آنند شرما اور اے آئی سی سی میڈیا انچارج رندیپ سرجے والا نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر دفاع نرملا سیتا رامن نے پارلیمنٹ میں یہ جھوٹ کہا ہے کہ ہندوستان اور فرانس کے درمیان رازداری معاہدہ ہے ، جس کی رو سے رافیل لڑاکا جیٹ طیاروں کی قیمت کا انکشاف نہیں کیا جاسکتا ۔ بہرحال حقیقت یہ ہے کہ رافیل لڑاکا طیاروں کی تجارتی لاگت کے انکشاف سے نہ تو راز داری معاہدے کی خلاف ورزی ہوگی اور نہ کوئی خفیہ یا محفوظ معلومات منظر عام پر آئیںگی ۔ شرما نے اسے مراعات شکنی کا واضح معاملہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ وزیر اعظم اور وزیر دفاع کی جانب سے قوم کو گمراہ کرنے کا واضح معاملہ ہے ۔ بہرحال لوک سبھا میں کانگریس قائدین اس ضمن میں سوالات اٹھائیںگے۔ شرما نے رافیل لڑاکا طیاروں کی معاملت میں زبردست اسکام کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ 20 جولائی کو پارلیمنٹ میں حکومت کے خلاف تحریک ِ عدمِ اعتماد پر مباحث کے دوران وزیر اعظم نے رافیل معاملت میں نام نہاد قوم پرستی کی چادر میں چھپنے کی کوشش کی ۔ بہرحال سچائی یہ ہے کہ مودی حکومت ، رافیل معاملت میں قومی مفاد اور قومی سلامتی پر ناقابل معافی سمجھوتہ کرنے کی خاطی ہے ۔ یہ یقینا ایک اسکام ہے ، کیوںکہ اس کی وجہ سے طریقۂ کار کی خلاف ورزی کا سوال اٹھتا ہے۔ مابعد آزادی ہندوستان کی تاریخ میں ایسا کبھی نہیں ہوا ہے ۔

جواب چھوڑیں