شعیب ملک پہلی مرتبہ باپ بننے سے پہلے چھٹی کے خواہاں

پاکستان کے سابق کپتان شعیب ملک نے کہا کہ کرکٹرز کو بچے کی ولادت کی وجہ سے چھٹی ملنا چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ وہ اکتوبر میں باپ بن جائیںگے لہٰذا ان دنوں اپنی اہلیہ ثانیہ مرزا کو زیادہ وقت دینا چاہتا ہوں۔ شعیب ملک نے کہاکہ اتھلیٹ یا کرکٹرز کیلئے اپنے خاندان کو زیادہ وقت دینا ممکن نہیں ہوتا جو کھیل کی مصروفیات کے باعث زیادہ تر سفر میں رہتے ہیں تاہم ان کا فی الوقت ایسا کرنا دنیا میں آنے والے بچے کیلئے انصاف نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ ان کے ایک دوست کرکٹر کو تنخواہ کے ساتھ تین ماہ کی رخصت ملی تھی اور وہ بھی ایسا ہی کرنا چاہتے ہیں لیکن یہ سب اتنا آسان بھی نہیں ہے۔ شعیب ملک کے مطابق انہوں نے ٹسٹ کرکٹ بھی اسی وجہ سے چھوڑی تھی کہ وہ اپنی فیملی کو زیادہ وقت دینا چاہتے تھے اور اسی مقصد کو ذہن میں رکھتے ہوئے وہ آئندہ برس عالمی کپ کے بعد ونڈے فارمیٹ کو بھی خیرباد کہہ دیں گے جس کے بعد وہ صرف ٹی ٹونٹی کرکٹ کھیل کر اپنے خاندان کے ساتھ وقت گزارنا چاہیں گے۔ شعیب ملک نے کہاکہ ثانیہ مرزا بھی ان کی طرح ایک اتھلیٹ ہیں لیکن امید سے ہونے کے بعد وہ خود کو عمدگی سے سنبھال رہی ہیں اور خود کو بہترین والد ثابت کرنے کیلئے وہ کتابیں پڑھ رہے ہیں جبکہ دوستوں کے مشورے بھی معاون ثابت ہوتے ہیں اور انہیں کوئی خاص پریشانی نہیں ہے۔ انہوں نے مزید بتایاکہ ان کے بچے کے ساتھ ماں اور باپ دونوں کا نام لگے گا اور یہ ان کا مشترکہ فیصلہ ہے۔

جواب چھوڑیں