کمل ہاسن کا سیاست کی خاطر فلموں کو خیرباد کہنے کا عزم

اداکار و فلمساز کمل ہاسن جنہوں نے صرف تین سال کی عمر میں فلمی صنعت میں قدم رکھا تھا ، اب سیاست میں قدم جما رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اگر عوام ان کی تائید کریں تو کوئی بھی سفر ، چاہے اس کی منزل کہیں بھی کیوں نہ ہو ، ناگوار یا تکلیف دہ نہیں ہوسکتا۔ کمل ہاسن نے 21 فروری کو مدورائی میں اپنی پارٹی مکل نیدھی میم (ایم این ایم) کے قیام کا اعلان کیا تھا جس کے اندرون 48 گھنٹے 201597 افراد نے اس میں شمولیت کے لیے اپنا نام درج کرایا تھا۔ سیاسی سفر سے متعلق استفسار پر کمل ہاسن نے بذریعہ ای میل دیئے گئے انٹرویو میں آئی اے این ایس کو بتایا کہ زبردست دباؤ ہے ۔ یہ بہت ہی سخت راستہ ہے ۔ بعض اوقات آپ اپنا راستہ کھو دیتے ہیں ، لیکن جب لوگ آپ کے ساتھ ہوتے ہیں تو آپ پر اعتماد ہوتے ہیں اور کوئی بھی سفر تکلیف دہ یا ناگوار نہیں ہوتا چاہے وہ آپ کو کہیں بھی لے جائے ۔ انہوں نے یہ بھی اعلان کیا تھا کہ سیاست میں قدم رکھنے کے بعد وہ مزید فلمیں نہیں کریںگے۔ اس استفسار پر وہ اس کا خاتمہ کس طرح کریںگے تو انہوں نے کہا کہ انتخابی بھاگ دوڑ خود ہی اس کا خاتمہ کردے گی ۔ اب میں نے ایک راستہ چن لیا ہے ۔ بہرحال فلموں کو الوداع کہنے سے پہلے ان کے مداح ان کی آنے والی فلم ’’وشوا روپ 2 ‘‘ میں ان کی اداکاری سے لطف اندوز ہوسکتے ہیں۔ یہ فلم، 10 اگست کو ریلیز کی جائے گی ۔ روہت شٹی اور انیل امبانی کی زیرقیادت ریلائنس انٹرٹینمنٹ اسے ہندی میں بھی پیش کرے گی ۔ علاوہ ازیں اسے تلگو زبان میں بھی ڈب کیا جائے گا۔ کمل ہاسن کا کہنا ہے کہ یہ فلم جاسوسی سے متعلق ہے۔

جواب چھوڑیں