دہلی سے عازمین حج کا آخری قافلہ سوئے حرم روانہ

حج بیت اللہ2018کے مقدس فریضہ کی ادائیگی کے لیے گذشتہ 14؍جولائی 2018سے جاری حج پروازوں کا سلسلہ 28؍اگست2018کودہلی کے اندرا گاندھی انٹرنیشنل ایئر پورٹ ،ٹرمنلII- سے سعودی ایئرلائنس کی 49ویں پرواز کے ساتھ ہی پوری کامیابی کے ساتھ اور پرامن طریقے سے اختتام پذیر ہوگیا۔اس موقع پر عازمین حج کی آخری پرواز کو روانہ کرنے کے لیے حج ٹرمنل پر دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی کے چیئرمین جناب محمد اشراق خان، ارکان محترمہ سیما طاہرہ، جناب فیروز احمد اور حج کمیٹی آف انڈیا کے رکن اور دہلی ایمبارکیشن پوائنٹ کے کوارڈینٹر ڈاکٹر مونس انصاری، عرفان احمد، حج کمیٹی آف انڈیا کے اسٹاف اور حج رضاکار تنظیموں کے گروپ کے صدر حاجی ادریس اور دیگر رضاکار بھی موجود تھے ۔ ملک کے کل 20امبارکیشن پوائنٹ میں دہلی سب سے بڑا ایمبارکیشن پوائنٹ ہے جہاں سے صوبہ دہلی کے علاوہ دیگر سات ریاستوں مغربی اترپردیش، ہماچل پردیش، اتراکھنڈ، چنڈی گڑھ،ہریانہ ،پنجاب اور جموں کشمیر کے عازمین حج بیت اللہ کے لیے روانہ ہوتے ہیں۔اس سال دہلی امبارکیشن پوائنٹ سے حج کے لیے جانے والے عازمین کی مجموعی تعداد 19704ہے ۔جس میں دہلی 2101،اترپردیش 13799، ہماچل پردیش81، اتراکھنڈ1294، چنڈی گڑھ50،ہریانہ1542، پنجاب290 اور جموں کشمیر515عازمین شامل ہیں کل مرد10385کل خواتین9319 جبکہ 14شیرخوار بچے بھی شامل ہیں۔یہ اطلاع دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی کے ایگزیکٹو آفیسر اشفاق احمد عارفی نے اپنے صحافتی بیان میں فراہم کی۔ انہوں نے بتایا کہ ضابطے کے مطابق دہلی سے حج کے لیے روانہ ہونے والے عازمین کے لیے مقامی سطح پر تمام تر سہولیات دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی کے ذریعہ انجام دی گئیں جس کے تحت حج منزل کے علاوہ مسجد و درگاہ سید فیض الٰہی اور رام لیلا میدان میں عازمین حج اور ان کو روانہ کرنے کے لیے ساتھ آنے والے تمام احباب و رشتہ داروں کے لیے تمام تر سہولیات پر مشتمل وسیع و عریض حج کیمپ لگایا گیا۔ جس میں حکومت دہلی کے مختلف شعبوں، محکمئہ محصولات،محکمہ صحت، ڈوسیب، بی۔ایس۔ای۔ایس، سول ڈیفنس، دہلی جل بورڈ،لوک نایک اسپتال، دہلی ٹرانسپورٹ، نارتھ ایم سی ڈی، دہلی پولیس، دہلی ٹریفک پولس، فائر سروس کی جانب سے مختلف اقسام کی سہولیات فراہم کی گئیں۔ اس درمیان تمام ریاستوں کے چیئرمین، افسران و کارکنان کے علاوہ حج رضاکار تنظیموں نے بھی اپنی خدمات فراہم کیں۔

جواب چھوڑیں