مخبری کے شبہ میں سابق ماوسٹ کو گولی ماردی گئی

ماوسٹوں نے مخبری کے شبہ میں سابق ہمدرد کو گولی مارکر ہلاک کردیا ۔ یہ واقعہ چکا گویا( ایجنسی علاقہ وشاکھا پٹنم) میں پیش آیا ۔ پولیس نے بتایا کہ ماوسٹوں کا ایک گروپ، دو دن قبل چکا گویا موضع میں24 سالہ وی جئے رام کے مکان میں داخل ہوا اور اس کی بیوی کی فریاد کے باوجود جئے رام کو باہر کھینچ کر لانے کے بعد ماوسٹوں نے اسے گولی مار دی ۔ جئے رام کسان تھا جس نے 2013 میں ملی ٹینٹ گروپ میںشمولیت اختیار کی تھی تاہم6 ماہ قبل وہ قومی دھارے میں شامل ہوگیا تھا ۔ اپنے ایک کیڈر کی ہلاکت کے پس پرد جئے رام کو ذمہ دار مانتے ہوئے ماوسٹوں نے یہ کاروائی کی ہے ۔ گذشتہ سال پولیس کے ساتھ تصادم میں جی نارائن راؤ، دیگر ماوسٹوں کے ساتھ مارا گیا تھا ۔ سب انسپکٹر پولیس بی چندر شیکھر نے بتایا کہ ممنوعہ گروپ کی جانب سے شروع ہونے والی ہفتہ شہیداں تقاریب سے قبل وہ ، جئے رام کو محفوظ مقام منتقل ہونے کی ہدایت دے چکے تھے مگر جئے رام نے پولیس کی اپیل کو نظر انداز کردیا تھا ۔

جواب چھوڑیں