مودی سے مصافحہ نے عمران کی بولتی بند کردی تھی

 کرکٹر سے سیاستداں بنے عمران خان جو پاکستان کے وزیراعظم بننے والے ہیں اس وقت کے چیف منسٹر گجرات نریندرمودی سے مصافحہ کے وقت دم بخود رہ گئے تھے۔ 2006ء میں نئی دہلی میں پیش آئے اس واقعہ کا تذکرہ عمران کی سوانح عمران خان ورسس عمران: دی ان ٹولڈاسٹوری میں موجود ہے جسے فرینک ہوزر نے لکھا ہے۔ عمران کو خوف تھا کہ اس مصافحہ کے دن کے سیاسی عزائم پر سنگین اثرات مرتب ہوں گے کیونکہ 2002ء کے گجرات فسادات کے باعث مودی کی امیج پاکستان میں داغدار تھی۔ کتاب میں نشاندہی کی گئی کہ منتظمین نے عمران اور مودی کو خطاب کی دعوت دی تھی لیکن عمران کو یہ پتہ نہیں تھ کہ دونوں ایک ہی سیشن میں ہوں گے۔ مودی کو نشست پر دیکھتے ہی عمران کے پسینے چھوٹ گئے تھے۔ مودی کو اپنی طرف بڑھتا دیکھ عمران خان کی بولتی بند ہوگئی تھی۔ مودی سیدھے عمران کے سامنے آکر کھڑے ہوگئے۔ انہوں نے گرمجوشیی سے عمران کا ہاتھ پکڑا اور مصافحہ کیا۔ یہ کٹھن لمحہ تھا۔ عمران کے منہ سے الفاظ نہیں نکل رہے تھے۔ مودی نے عمران کی کپتانی میں پاکستانی ٹیم نے جو میاچ جیتے ان کی تعریف کی۔ جواب میں عمران نے شکریہ کہا۔عمران کو اندیشہ تھا کہ مودی سے مصافحہ کی تصاویر اگلی صبح پاکستانی اخبارات کے صفحہ اول پر چھپیں گی ہنگامہ مچے گا اور ان کا سیاسی کیرئیر متاثر ہوگا لیکن انہوں نے اس وقت راحت کی سانس لی جب انہوں نے دیکھا کہ پاکستانی پریس نے اس ملاقات میں کوئی دلچسپی نہیں لی۔

جواب چھوڑیں