نوازشریف کو سی سی یو منتقل کرنے کی تجویز

سابق وزیراعظم نواز شریف کی اڈیالہ جیل میں طبیعت شدید خراب ہوگئی ہے اور ڈاکٹروں نے انہیں سی سی یو منتقل کرنے کی تجویز دے دی ہے۔ذرائع کے مطابق سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کی اڈیالہ جیل میں طبیعت بگڑ ہوگئی ہے۔ پمز ہسپتال کے ایچ او ڈی ڈاکٹر نعیم ملک نے نواز شریف کو سی سی یو منتقل کرنے کی تجویز دی ہے۔ جیل ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈاکٹروں کی جانب سے بلڈ ٹیسٹ کیا گیا تو نوازشریف کے خون میں کلاٹس کی نشاندہی ہوئی جس کے باعث ان کے خون کی روانی متاثر ہوگئی ہے اور دونوں بازوں میں شدید درد ہے جبکہ نوازشریف کی ای سی جی بھی غیرتسلی بخش آئی ہے۔جیل ذرائع کے مطابق راولپنڈی پمز ہسپتال کے ایچ او ڈی ڈاکٹر نعیم ملک نے میاں نواز شریف کو سی سی یو منتقل کرنے کی تجویز دی ہے، جیل حکام نے پنجاب کی نگراں حکومت سے رابطہ کیا ہے تاکہ نوازشریف کو علاج کے لئے اسپتال منتقل کیا جاسکے، پنجاب حکومت سے اجازت ملتے ہی میاں نواز شریف ہسپتال منتقل کردیا جائے گا، اس حوالے سے اڈیالہ جیل کی سیکیورٹی مزید سخت کردی گئی ہے اور جیل کے اردگرد پولیس کی اضافی نفری تعینات کردی گئی ہے جب کہ میڈیا کو جیل سے دوکلومیٹر دور روک دیا گیا ہیذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ اگر چیک اپ کرانا ہے تو راولپنڈی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیولوجی سے کرایا جائے، کسی دوسری اسپتال منتقل نہیں ہونا چاہتا۔ذرائع کے مطابق نواز شریف کی جیل سے ممکنہ منتقلی پر پمز اسپتال میں سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں اور وی آئی پی وارڈ کے باہر بھی پولیس کی بھاری نفری تعینات ہے۔

جواب چھوڑیں