گجرات میں ہجوم کا تشدد اجمل موہنیہ ہلاک

 گجرات کے ضلع دہود میں چوری کے شبہ میں ہجوم نے ایک شخص کو پیٹ پیٹ کر مارڈالا جبکہ دوسرا شدید زخمی ہوگیا۔ پولیس نے آج یہ بات بتائی۔ ملک بھر میں ہجوم کے تشدد کا تازہ نشانہ اجمل موہنیہ بنا ہے۔ 12 سے زائد افراد کا ایک گروپ موضع کالی مانوال چوری کے ارادے سے کل رات دیرگئے گیاتھا۔ لمڑی پولیس اسٹیشن کے انسپکٹر پی ایم جیودل نے یہ بات بتائی۔ دیہاتیوں کو جب ان کی نقل وحرکت کا پتہ چلا تو وہ ایک مقام پر اکٹھاہوگئے اور انہوں نے ’’چوروں‘‘ پر حملہ کردیا۔ ہجوم نے پیچھا کرکے دوکو پکڑلیا جبکہ مابقی بچ نکلے۔ دیہاتیوں نے مبینہ طور پر دونوں کونشانہ بنایا۔ پولیس کے پہنچنے تک دونوں شدید زخمی ہوگئے تھے۔ پولیس دونوں کو دہود سرکاری اسپتال لے گئی جہاں پہنچنے تک موہنیہ دم توڑچکا تھا، زخمی شاروماتھرپلاس زیرعلاج ہے۔ یہ دونوں کئی کیسیس میں سزا کاٹ کر دہود سب جیل سے حال میں رہا ہوئے تھے۔ پلاس نے پولیس کوبتایاکہ موہنیہ سے اس کی ملاقات جیل میں ہوئی تھی۔ دونوں نے موضع میں ملاقات کا فیصلہ کیاتھاکہ ان پر 100دیہاتیوں کے ہجوم نے جو دھاردار ہتھیاروں سے لیس تھا حملہ کردیا۔ پولیس نے 100دیہاتیوں کے خلاف ایف آئی آردرج کرلی ہے۔ قبل ازیں اسی ماہ راجستھان کے ضلع الور میں گائے کی اسمگلنگ کے شبہ میں28 سالہ اکبرخان کو ہجوم نے مارڈالا تھا۔

جواب چھوڑیں