کنٹی ویلوگوپروگرام ‘ ڈاکٹرس کی خدمات سے عارضی استفادہ کافیصلہ

ریاستی حکومت کی جانب سے ریاست کے عوام کوامراض چشم سے محفوظ رکھنے کے لئے 15اگست سے ریاست گیر سطح پر کنٹی ویلوگوپروگرام شروع کرنے کا فیصلہ کیاگیا ۔ اس پروگرام پرعمل آوری سے سرکاری دواخانوں کی کارکردگی کو متاثر ہونے سے بچانے کے لئے حکومت کی جانب سے چھ ماہ کے مختصر سے عرصہ کے لئے آیوش اوربے روزگار ایم بی بی ایس ڈاکٹرس کی خدمات سے استفادہ کرنے کافیصلہ کیاگیاہے۔ اس ضمن میں محکمہ صحت کی جانب سے ڈسڑکٹ میڈیکل اینڈ ہیلت آفیسرس کو ذمہ داری تفویض کرتے ہوئے عارضی تقررات کے لئے رہنمایانہ خطوط بھی جاری کردیئے گئے ۔ ان رہنمایانہ خطوط کے تناظر میں ڈسڑکٹ میڈیکل اینڈ ہیلت آفیسرس کی جانب سے اہل امیدواروں سے کنٹی ویلگوپروگرامس کی ٹیم میں شامل ہونے کے لئے اعلامیہ بھی جاری کردیاگیا۔ کنٹی ویلگو پروگرام کے لئے جملہ 400ڈاکٹرس درکارہیں ۔ مکمل عارضی طورپرکئے جانے والے ان تقررات کی میعاد 6ماہ پرمشتمل ہوگی اور خدمات کاآغاز 15 اگست 2018 سے ہوگا۔ اس کے علاوہ ضرورت کے مطابق نیم طبی عملہ کی خدمات بھی حاصل کی جائیں گی۔ عہدیداروں کے مطابق امیدواروں کا راست طورپرانتخاب کیا جائے گا اورانہیں 30,000روپئے ماہانہ مشاہرہ دیا جائے گاجس کومحکمہ فینانس کی جانب سے منظوری دی جاچکی ہے ۔ اس اقدام کامقصد یہ ہے کہ آنکھوں کے معائنہ کے پروگرام کی وجہ سے سرکاری دواخانوں کی روزمرہ کی خدمات متاثرنہ ہونے پائیں ۔ عارضی طورپر خدمات انجام دینے والے ڈاکٹرس امراض چشم سے متاثرہ افراد کا ابتدائی معائنہ کرنے کے بعد سرکاری دواخانہ سے رجوع کریں گے ۔ جہاں ان کا ضروری علاج کیا جائے گا۔ حکومت کی جانب سے کنٹی ویلوگو پروگرام کو کامیابی سے ہمکنارکرنے کیلئے 799ٹیمیں تشکیل دی جارہی ہیںجوایک ایم بی بی ایس ڈاکٹر‘ایک OPTOMETRIST اے این ایم نرس اورآشاورکرپرمشتمل ہوگی۔ حکومت کی جانب سے ریاست بھر میں عوام کو آنکھوں کے علاج کی سہولت فراہم کرنے کے لئے 114سرکاری اورخانگی دواخانوں کی بھی نشاندہی کی گئی ہے جہاں مریضوں کی آنکھوںکا آپریشن وعلاج کیاجائے گا۔

جواب چھوڑیں