بی جے پی‘ ووٹ بینک کی سیاست کررہی ہے۔این آر سی‘ ہند ۔ بنگلہ دیش تعلقات بگاڑدے گا: ممتا بنرجی

چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی نے آسام میں نیشنل رجسٹر فار سٹیزنس(این آر سی) کے حتمی مسودہ کے سلسلہ میں بی جے پی پر آج تنقید تیز کردی۔ انہوں نے اس پر ووٹ بینک کی سیاست کرنے کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے خبردار کیا کہ یہ مسئلہ بنگلہ دیش کے ساتھ ہندوستان کے رشتے بگاڑدے گا۔ انہوں نے کہا کہ جن 40 لاکھ شہریوں کے نام ندارد ہیں ان میں صرف ایک فیصد درانداز ہوسکتے ہیں لیکن لوگوں کو دراندازی کے نام پر ہراساں کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ تمام اپوزیشن جماعتوں سے اپیل کرتی ہیں کہ وہ اپنے وفود آسام بھیجیں۔ ٹی ایم سی سربراہ نے کہا کہ وہ سابق بی جے پی قائد یشونت سنہا سے بھی دورہ آسام کی خواہش کرچکی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش کے ساتھ ہندوستان کے تعلقات نہایت خوشگوار ہیں۔ این آر سی مسئلہ ہند۔ بنگلہ دیش تعلقات کو تباہ کردے گا۔ این آرسی کے حتمی مسودہ سے جو 40 لاکھ نام غائب ہیں ان میں صرف ایک فیصد نام غیرقانونی دراندازوں کے ہوسکتے ہیں لیکن بی جے پی ایسا دکھانے کی کوشش کررہی ہے کہ یہ سبھی درانداز ہیں۔ ممتا بنرجی‘ پارلیمنٹ کے احاطہ میں میڈیا سے بات چیت کررہی تھیں۔ کل انہوں نے الزام عائد کیا تھا کہ آسام میں این آر سی مشق عوام کو بانٹنے کا سیاسی حربہ ہے۔ انہوں نے خبردار کیا تھا کہ اس سے ملک میں خون خرابہ اور خانہ جنگی ہوگی ۔انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش دہشت گرد ملک نہیں ہے۔ آزادی اور بٹوارہ کے بعد کئی لوگ پاکستان سے گجرات‘ راجستھان ‘ اترپردیش اور پنجاب آئے۔ بنگلہ دیش سے بھی لوگ تریپورہ‘ مغربی بنگال‘ بہار اور کئی دیگر ریاستوں میں آئے۔ یہ لوگ درانداز یا دہشت گرد نہیں ہیں۔ کیا یہ جرم ہے کہ بنگلہ دیش اور مغربی بنگال کے لوگ ایک ہی زبان بولتے ہوں۔ مرکز کے خیال میں بنگلہ بولنے والا ہر شخص بنگلہ دیشی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی ووٹ بینک کی سیاست کررہی ہے۔ این آر سی پوری دنیا کو متاثرکرے گا۔ سرحدوں کا انتظام مرکز کی ذمہ داری ہے۔ دراندازوں کے نام پر مرکز ‘ لوگوں کو ہراساں کررہا ہے۔ میں اپوزیشن جماعتوں سے اپیل کرتی ہوں کہ وہ اپنے وفود آسام بھیجیں۔ میں یشونت سنہا جی سے بھی خواہش کرتی ہوں کہ وہ آسام جائیں۔

جواب چھوڑیں