افغانستان میں ہندوستانی شہری  کا اغوا و قتل

افغانستان میں ایک بین الاقوامی غذائی خدمات کمپنی کے لئے برسرکار ایک ہندوستانی شہری کی نامعلوم بندوق برداروں کے حملہ میں ہلاک 3 بیرونی شہریوں میں شامل ہے۔ قبل ازیں انہیں قومی دارالحکومت کابل سے اغوا کیا گیا تھا۔ اس جنگ زدہ ملک میں بیرونی شہریوں کو نشانہ بنانے کا یہ تازہ ترین واقعہ ہے۔ ٹولو نیوز نے کابل کے ایک سینئر سفارت کار کے حوالہ سے بتایا کہ غذائی خدمات فراہم کرنے فرانسیسی کمپنی ’’سوڈیکسو‘‘ کے لئے ایک ہندوستانی‘ ایک ملایشیائی اور مقدونیہ کا ایک شہری بطور شیف خدمات انجام دے رہے تھے۔ مہلوکین کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی ہے۔ انہیں آج صبح سویرے اغوا کرلیا گیا اور بعدازاں ان کی نعشیں افغان دارالحکومت کے ایک شورش زدہ علاقہ موساہی میں پائی گئیں۔ مقامی میڈیا کی اطلاعات کے مطابق مسلح افراد نے (مقامی وقت کے مطابق) صبح تقریباً 8:30 بجے بیرونی شہریوں کو ان کی گاڑی سے نکالا اور ایک ٹویوٹا کرولا گاڑی میں انہیں اغوا کرلیا۔ بیرونی شہریوں کا ڈرائیور تقریباً 20منٹ بعد دفتر پہنچا اور عملہ کو اغوا کی اطلاع دی۔ پولیس نے تلاشی مہم شروع کی اور علاقہ کا محاصرہ کرلیا۔ تقریباً 2 گھنٹے بعد نعشیں برآمد کی گئیں۔ پولیس ‘ دہشت گردانہ واقعہ کے طورپر اس کی تحقیقات کررہی ہے۔ کسی بھی گروپ نے ہنوز ہلاکتوں کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

جواب چھوڑیں