شیلٹر ہوم عصمت ریزی کیس‘مرکز اور حکومت بہار کو نوٹس

سپریم کورٹ نے بہار کے مظفر پور میں ایک گرلز شیلٹر ہوم میںکمسن لڑکیوں کے ساتھ عصمت دری کے واقعات پر از خود نوٹ لیتے ہوئے مرکزی حکومت اور بہار حکومت کو جمعرات کو نوٹسیں جاری کیں۔جسٹس ایم بی لوکر اور جسٹس دیپک گپتا پر مشتمل بنچ نے اس سلسلہ میں مرکزی حکومت اور بہار حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے تفصیلی جواب دینے کو کہا ہے۔ کورٹ نے میڈیا سے کہا ہے کہ وہ متاثرہ لڑکیوں کی کسی بھی شکل میں (دھندلی یا تبدیل شدہ تصاویر)نشر نہ کرے۔سپریم کورٹ نے پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے ایک گوشہ میں آبروریزی کا شکار لڑکیوں کی شناخت کو ظاہر کئے جانے پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ آخر میڈیا نے ان کی شناخت کیسے اور کیوں ظاہر کی۔عدالت نے اس معاملہ میں تعاون کے لئے سپریم کورٹ کی وکیل ارپنا بھٹ کو رفیق عدالت مقرر کیا ہے۔

جواب چھوڑیں