میڈیا جیسے پیش کرتا ہے، ویسا خراب رویہ آسٹریلیائی ٹیم کا نہیں: ڈیرین لیہمن

سابق آسٹریلیا ئی کوچ ڈیرین لیہمن کا کہنا ہے کہ ان کے دور میں ٹیم نے کھیل جذبہ سے کھیلا ہے۔ ان کے مطابق کھلاڑیوں کا میدان پر رویہ اچھا رہا ہے ، میڈیا جس طرح پیش کرتا ہے ویسا کچھ نہیں۔ ان کا اشارہ نیولینڈس ٹیسٹ بال سے چھیڑچھاڑ معاملے کے بعد کنگارو کھلاڑیوں کے بارے میں آئی خبروں کی طرف تھا۔ جنوبی افریقہ کے خلاف کیپ ٹائون ٹیسٹ میں اسٹیو اسمتھ، ڈیوڈ وارنر اورکیمرن بینکروفٹ کو بال سے چھیڑچھاڑ معاملے میں پکڑنے کے بعد آسٹریلیا پر چوطرفہ تنقید ہوئی تھی۔ اس کے بعد کوچ لیہمن نے اپنے عہدہ سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ لیہمن نے یہ بھی کہا کہ میری پوری میعاد کے دوران ٹیم نے اچھے جذبہ کا مظاہرہ کرتے ہوئے کھیلا ہے۔ اپنے دنوں کو یاد کرتے ہوئے اس سابق آسٹریلیائی کھلاڑی نے کہا کہ ہمارے زمانے میں بہت سلیجنگ ہوتی تھی۔ آپ کو کھیل کا پروموشن اچھی طرح سے کرنا ہوتا ہے اس کے لیے میدان پر رویہ اچھا ہونا چاہیے۔ سابق کنگارو کوچ نے کہا کہ کچھ واقعات کے بارے میں آئی سی سی نے نوٹس بھی لیا تھا۔ میک ویئر اسپورٹس ریڈیو سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے یہ باتیں کہیں۔ واضح رہے کہ اسٹیو اسمتھ، ڈیوڈ وارنر اور بینکروفٹ کو کرکٹ آسٹریلیا نے سزا دیتے ہوئے معطل کیا ہے۔ وارنر اور اسمتھ کو ایک ایک سال اور برینکروفٹ کو9ماہ کے لیے معطل کیاگیا ہے۔ سبھی فی الحال ٹیم سے باہر ہیں۔اہم کھلاڑیوں کی عدم موجودگی میں آسٹریلیا نے انگلینڈ میں محدود اوورس سیریز میں شکست کا مزا چکھا تھا۔ اس کے بعد زمبابوے میں ٹی 20سہ رخی سیریز میں انہیں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ لیہمن کا خیال ہے کہ اہم کھلاڑیوں کے نہ ہونے کے باوجود آسٹریلیا کا مظاہرہ بہتر ہوگا۔ واضح رہے کہ اس سال کے اواخر میں ہندوستانی ٹیم کو آسٹریلیا کا دورہ کرنا ہے۔ اس میں کنگارو ٹیم کا مظاہرہ دیکھنے لائق ہوگا۔ ورلڈ کپ 2019ء تک اسمتھ اور وارنر پر امتناع ختم ہوجائے گا۔

جواب چھوڑیں