بنگلہ دیش کے کپتان شکیب الحسن ایشیا کپ سے باہر ہوسکتے ہیں

بنگلہ دیش کے ٹیسٹ اور ون ڈے کے کپتان شکیب الحسن ستمبر میں ہونے والے ایشیا کپ سے باہر ہوسکتے ہیں۔ ان کی انگلی زخمی ہوچکی ہے جس کی سرجری ہونی ہے اور اسی وجہ سے ایشیا کپ میں ان کا کھیلنا مشکوک نظر آرہا ہے۔ ویسٹ انڈیز کے دورے سے واپسی کے بعد ایرپورٹ پر صحافیوں سے بات چیت میں شکیب الحسن نے کہا کہ مجھے سرجری کرانی ہے۔ اب بحث اس بات پر ہورہی ہے کہ وہ سرجری کب ہوگی۔ میں چاہتا ہوں کہ جتنی جلد یہ آپریشن ہوجائے اتنا ہی اچھا ہے۔ جہاں تک مجھے لگتا ہے ایشیا کپ سے پہلے تک سرجری ہوجائے گی۔ واضح رہے کہ اس سال جنوری میں زمبابوے اور سری لنکا کے ساتھ ہوئی ٹرائی سیریز کے فائنل کے دوران شکیب الحسن کا بایاں ہاتھ زخمی ہوگیا تھا۔ اس کی وجہ سے انہیں درمیان میں ہی میدان چھوڑکر جانا پڑا تھا اور وہ باقی میاچس میں حصہ نہیں لے سکے تھے۔ اس کے بعد وہ سری لنکا کے خلاف 2ٹیسٹ میاچوں کی سیریز اور 2میاچوں کی ٹی 20سیریز میں بی حصہ نہیں لے سکے تھے۔ مارچ میں سری لنکا، ہندوستان اور بنگلہ دیش کے درمیان ہوئے ٹورنمنٹ میں بھی وہ نصف ٹورنمنٹ کے بعد پہنچے تھے۔ بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کو اب شکیب الحسن کی سرجری کے تعلق سے جلد سے جلد کوئی فیصلہ لینا ہوگا۔ اگر فوری یہ سرجری ہوتی ہے تو کافی حد تک امکان ہے کہ شکیب ایشیا کپ سے باہر ہوجائیں۔ اس سال کا ایشیاء کپ 15؍ ستمبر سے شروع ہوگا اور اگر شکیب ٹیم سے باہر ہوتے ہیں تو بنگلہ دیش کے لیے یہ زوردار جھٹکہ ہوگا۔ شکیب نہ صرف سینئر آل رائونڈر ہیں بلکہ ان کے پاس کافی تجربہ بھی ہے۔ ایشیا کپ میں فائل سمیت جملہ 13میاچس ہوں گے۔ 28؍ ستمبر کو دبئی میں فائنل میاچ ہوگا۔ پہلا مقابلہ 15؍ ستمبر کو بنگلہ دیش اور سری لنکا کے درمیان کھیلا جائے گا۔

جواب چھوڑیں