لوک سبھا ارکان کو 22 زبانوں میں اظہار خیال کا اختیار: سمترا مہاجن

 لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن نے آج یہ اعلان کیا کہ ایوان کے ارکان مباحث کے لئے 22 زبانوں کو استعمال کرسکتے ہیں جن میں مزید 5 بشمول کشمیری زبان کو بھی اس فہرست میں شامل کیا گیا تھا۔ مہاجن نے وقفہ سوالات کے فوری بعد اس کا اعلان کیا اور کہا کہ بیک ایک وقت 5 مزید زبانوں میں ترجمانی کی سہولت فراہم کی گئی ہے جیسے ڈوگری، کشمیری، سنتھالی اور سندھی ارکان کو اگر وہ ان 5 نئی متعارف کی گئی زبانوں میں بولنا چاہتے ہیں تو انہیں چاہیے کہ وہ 24 گھنٹے قبل اطلاع دیں۔ بی جے پی رکن راجیو پرتاپ روڈی نے مطالبہ کیا کہ 10 کروڑ عوام بھوجپوری زبان بولتے ہیں لہٰذا اس پر بھی غور کیا جانا چاہیے۔

جواب چھوڑیں