ریاست بھر میں بارش۔عام زندگی معطل

ریاست تلنگانہ کے مختلف مقامات پر جمعہ کی شب سے بارش کا سلسلہ وقفہ وقفہ سے جاری ہے جس کے سبب عام زندگی مفلوج ہوگئی ۔ عادل آباد ، کھمم اور کتہ گوڑم اضلاع میں شدید بارش کے نتیجہ میں جہاں ٹریفک میں خلل پڑا وہیں زرعی سرگرمیاں بھی متاثر ہوئی ہیں۔ شدید بارش کے نتیجہ میں ان علاقوں میں جھلیں، تالاب لبریز ہوگئے اور سڑکیں زیر آب آگیں جس کے سبب عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔ دونوں شہروں حیدرآباد اور سکندرآباد کے مختلف علاقوں میں بھی ہفتہ کی صبح سے وقفہ وقفہ سے بارش ہورہی ہے۔بارش کے سبب کئی علاقوں میں سڑکوں پر پانی جمع ہوگیا اور بعض مقامات پر نشیبی علاقوں میں بھی پانی کے داخل ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔بارش کے سبب ہفتہ کی صبح دفاتر اور اسکولس جانے والوں کو مشکلات کاسامنا کرناپڑا ۔ حیدرآباد کے ساتھ ساتھ اضلاع میں بھی بارش کا سلسلہ جاری ہے ۔کھمم ضلع کے کوسومنچی منڈل کے نرسمہاگوڑم میں نلہ کنٹہ نہر لبریز ہوگئی جس کے سبب نرسمہالاگوڈم ۔پوچارم دیہاتوں کے درمیان آمد ورفت متاثر ہوئی ۔مودی گنڈہ منڈل کے چری ماری میں تالاب کا پانی داخل ہوگیا ۔منوگورو منڈل میں کوڈوپونجالا نہر میں پانی کا شدید بہاو دیکھا جارہا ہے ۔سڑکوں پر بھی پانی جمع ہوگیا ۔کتہ گوڑم،منوگورو،یلندوعلاقوںمیں کوئلہ کی نکاسی کا کام متاثر ہوا ہے ۔نیلاکونڈہ پلی منڈل کے آرے گنڈم میں تالاب کا پشتہ ٹوٹ گیاجس کے سبب کھیتوں میں پانی داخل ہوگیااور150ایکڑ پر پھیلی فصلوں کو نقصان پہونچا۔جئے شنکر بھوپال پلی ضلع کے کوٹارم، مہادیوپورم ، مہامتارم ، پلی میلا منڈلوں میں بھی شدیدبارش کی اطلاعات ہیں۔ کھمم۔ بھدرادری کتہ گوڑم اضلاع میں بھی بارش کے سبب نالے اور تالاب لبریز ہوگئے ۔کھمم ضلع میں اب تک 1766.08 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ہے ۔ضلع کے نیلاکونڈاپلی منڈل میں 253.8،مودے گونڈم میں 226.3، کھمم اربن منڈل میں 128.1ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ بوناکلو منڈل میں 109.4اور ستوپلی میں 76.8میٹر بارش ریکارڈ کی گئی ہے ۔

جواب چھوڑیں