ممتابنرجی پر دراندازوں کی سرپرستی کا الزام۔امیت شاہ کی کولکتہ میں ریالی

بھارتیہ جنتا پارٹی کے قومی صدر امیت شاہ نے آج ترنمول کانگریس کو بے دخل کرتے ہوئے بنگال میں کامیاب بنانے کی اپیل کی اور آسام میں این آر سی کے عمل کو مکمل کرتے ہوئے ہندوستان سے ہر درانداز کو نکال باہر کرنے کا عہد کیا ۔ امیت شاہ نے آج شہر میں یووا سبھاویمان سماویش ریالی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی 19 ریاستوں میں برسراقتدار ہے ، لیکن میرا ماننا ہے کہ ان ریاستوں میں ہماری جیت اس وقت تک بے معنی ہے جب تک کہ ہم شیاما پرساد مکرجی اور رابندر ناتھ ٹیگور کے مقام کو نہیں جیت لیتے ۔ آئیے ہم نریندر مودی کو ایک موقع دیں۔ بی جے پی صدر نے الزام عائد کیا کہ مغربی بنگال میں نظم و ضبط کی صورتِ حال بے قابو ہوچکی ہے ۔ بنگال میں جہاں کبھی رابندر ناتھ کا سنگیت گونجا کرتا تھا ، اب دھماکوں کی گونج سنائی دے رہی ہے۔ امیت شاہ نے یہ واضح کیا کہ بی جے پی ، این آر سی اور غیرقانونی دراندازی کو بنگال میں 2019ء کے انتخابات میں اپنا اصل ایجنڈا بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہم ترقی یافتہ بنگال چاہتے ہیں تو بی جے پی کے لیے ووٹ دیں۔ ہم اس بات کو یقینی بنائیں کہ آسام میں این آر سی کا عمل پرامن طور پر پورا ہو ۔ ممتا بنرجی یا راہول گاندھی ہمیں اس سے روک نہیں سکتے۔ ہم یقینا آسام میں این آر سی کے عمل کو مکمل کریںگے اور ہر درانداز کو ہندوستان سے نکال باہر کریںگے ۔ انہوں نے کہا کہ ممتا بنرجی نے اس بات کو یقینی بنایا کہ آج کی ہماری ریالی کا احاطہ نہ ہو۔ تمام بنگلہ ٹی وی نیوز چینلوں نے ریالی کا بلیک آؤٹ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم مغربی بنگال کے مخالف نہیں ہیں لیکن یقینا ممتا بنرجی کے مخالف ہیں۔ میں ترنمول کانگریس کے خلاف احتجاج کے لیے یہاں آیا ہوں۔ آج کی ریالی آنے والے دنوں کی ایک جھلک ہے ۔ بنگال میں تبدیلی آنے والی ہے اور بی جے پی ریاست میں ترنمول کانگریس کا جڑ پیڑ سے صفایا کرنے والی ہے۔ میں بنگال کے ہر ضلع میں جاؤںگا تاکہ ترنمول کانگریس کو بے دخل کیا جاسکے۔ امیت شاہ نے ممتا بنرجی کو چیلنج کرتے ہوئے کہا کہ وہ کان کھول کر اُن کی بات اچھی طرح سے سن لیں۔ انہوں نے سوال کیا کہ آخر ممتا بنرجی ، بنگلہ دیشی دراندازوں کو کیوں بچا رہی ہیں ؟ وہ اور راہول گاندھی اس مسئلہ پر اپنے موقف کی وضاحت کرنے کے بجائے اس پر احتجاج کررہے ہیں ۔ اس کی وجہ کانگریس کی ووٹ بینک کی سیاست ہے ۔ امیت شاہ نے کہا کہ 30 جولائی کو این آر سی مسودہ جاری کیے جانے کے بعد سے یہ مغربی بنگال کا ان کا پہلا دورہ ہے۔

جواب چھوڑیں