خاتون کو مارپیٹ کا ویڈیو وائرل‘دہلی پولیس ملازم کا لڑکا گرفتار

 دہلی کے ایک ملازم پولیس کے لڑکے کو جو ایک وائرل ویڈیو میں ایک خاتون کو بری طرح مارپیٹ کرتے دیکھا گیا‘ عصمت ریزی کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا ہے۔ پولیس نے جمعہ کے دن یہ بات بتائی۔ سوشیل میڈیا پر بہت زیادہ شیر کئے گئے اس ویڈیو میں جسے ٹی وی چیانلوں نے بھی دکھایا‘ نظر آنے والی خاتون نے پولیس کو بتایا کہ ملزم روہت تومر نے اسے اتم نگر میں اپنے دوست کے دفتر میں بلایا تھا اور وہاں اس کی عصمت ریزی کی تھی۔ ڈپٹی کمشنر پولیس(دوارکا) اینٹو آلفنس نے یہ بات بتائی۔ خاتون کا الزام ہے کہ جب اس نے پولیس سے شکایت کرنے کی بات کی تو ملزم نے اسے مارا پیٹا۔ یہ واقعہ اتم نگر میں 2 ستمبر کا ہے۔ گرفتاری مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کی دہلی پولیس کمشنر امولیہ پٹنائک کو ضروری کارروائی کی ہدایت کے اندرون چند گھنٹے عمل میں آئی۔ راج ناتھ سنگھ نے ٹویٹ کیا تھا کہ میں نے اس ویڈیو کا نوٹ لیا ہے جس میں ایک نوجوان ‘ ایک خاتون کو بری طرح ماررہا ہے۔ میں نے دہلی پولیس کمشنر سے فون پر بات کی اور اس سلسلہ میں ضروری کارروائی کے لئے کہا۔ ایک اور خاتون سے شکایت ملی کہ اس کے مرد دوست تومر نے اسے یہ ویڈیو دکھایا اوردھمکی دی کہ اس نے بات نہ مانی تو اس کا بھی یہی انجام ہوگا۔ ڈی سی پی(ویسٹ ) مونیکا بھاردواج نے بتایا کہ یہ عورت جمعرات کو پولیس سے رجوع ہوئی اور تومر کے خلاف مغربی دہلی کے تلک نگر پولیس اسٹیشن میں کیس درج کرلیا گیا ہے۔

جواب چھوڑیں