رفیق حریری کے قاتلوں کو عبرت ناک سزا دی جائے:خالد بن سلمان

 امریکہ میں متعین سعودی عرب کے سفیر شہزادہ خالد بن سلمان نے عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ لبنان کے سابق وزیراعظم رفیق حریری کے قاتلوں کو عبرت ناک سزا دلوانے کے لیے اپنا سیاسی کردار ادا کرے۔ مائیکرو بلاگنگ ویب سائیٹ ’ٹوئٹر‘ پر پوسٹ کی گئی متعدد ٹویٹس میں شہزادہ خالد بن سلمان نے کہا کہ رفیق حریری، باسل فلیحان اور ان کے ساتھیوں کے قاتل کھلے گھوم رہے ہیں۔ عالمی برادری کو انہیں کٹہرے میں لانے اور لبنانی میں سیاسی رہ نماؤں کی ٹارگٹ کلنگ کا سلسلہ ختم کرانے کے لیے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔ ایک ٹویٹ میں انہوں نے لکھا کہ رفیق حریری اور ان کے ساتھیوں کے مجرمانہ قتل کو 13 سال گذر گئے ہیں۔ تیرہ سال بعد آج ایک بار پھراقوام متحدہ کی خصوصی عدالت نے نام نہاد حزب اللہ کے ان چارعناصر کو رفیق حریری کے قاتل قرار دیا ہے۔ رفیق حریری کے قاتل آج بھی لبنان میں آزادانہ گھوم پھر رہے ہیں۔ انہوں نے لبنان کی خود مختاری اور اس کے عرب تشخص کو یرغمال بنانے کے بعد بیروت کو ایران کا غلام بنا رکھا ہے۔ خیال رہے کہ لبنان کے پراسیکیوٹر جنرل نے کہا ہے کہ عدالت نے ایک بار پھر واضح کیا ہے کہ رفیق حریری کے قتل میں حزب اللہ کے ارکان ملوث ہیں۔

جواب چھوڑیں