وجئے مالیا کے فرار ہونے میں مودی کا بھی ہاتھ: راہول گاندھی

حکومت پر تنقید تیز کرتے ہوئے کانگریس صدر راہول گاندھی نے جمعہ کے دن الزام عائد کیا کہ یہ ’’ناقابل تصور‘‘ ہے کہ وزیراعظم کو رپورٹ کرنے والی سی بی آئی نے ان کی منظوری کے بغیر وجئے مالیا کے خلاف لُک آؤٹ نوٹس میں نرمی پیدا کی ۔ راہول گاندھی نے ٹویٹ کیا کہ شراب کے بہت بڑے تاجر وجئے مالیا کے ملک سے فرار ہونے میں سی بی آئی نے مدد کی ۔ اس نے خاموشی سے ڈیٹین نوٹس کو انفارم نوٹس میں بدل دیا۔ سی بی آئی راست وزیراعظم کے تحت کام کرتی ہے۔ یہ بات سمجھ سے باہر ہے کہ سی بی آئی نے ایسے ہائی پروفائل متنازعہ کیس میں لُک آؤٹ نوٹس میں تبدیلی وزیراعظم کی منظوری کے بغیر کی ہو۔ راہول گاندھی نے کل ہی مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی پر وجئے مالیا سے ملی بھگت کا الزام عائد کیا تھا اور ان کا استعفیٰ مانگا تھا۔ انہوں نے کہا تھا کہ جیٹلی نے بند ہوچکی ایرلائنز کنگ فشر کے سربراہ سے اپنی ملاقات کے بارے میں تحقیقاتی ایجنسیوں کو کیوں نہیں بتایا۔ شراب کے بہت بڑے تاجر وجئے مالیا 2 مارچ 2016 کو ہندوستان سے روانہ ہوگئے تھے۔ ان پر بینکوں کو 9ہزار کروڑ کا دھوکہ دینے کا الزام ہے۔ پی ٹی آئی کے بموجب کانگریس صدر راہول گاندھی نے جمعہ کے دن الزام عائد کیا کہ سی بی آئی نے وجئے مالیا کے فرار ہونے میں مدد دی۔ یہ بات ناقابل تصور ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی کی منظوری کے بغیر ایسا کیا گیا ہو۔ مالیا معاملہ میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان الزامات اور جوابی الزامات شدت اختیار کرتے جارہے ہیں۔ شراب کے بہت بڑے تاجر نے چہارشنبہ کے دن دعویٰ کیا تھا کہ انہوں نے برطانیہ روانگی سے قبل وزیر فینانس ارون جیٹلی سے ملاقات کی تھی۔ کانگریس صدر نے ٹویٹ کیا کہ وجئے مالیا کے فرار ہونے میں سی بی آئی نے خاموشی سے مدد کی۔ اس نے ڈیٹین نوٹس کو انفارم نوٹس میں بدل دیا۔ سی بی آئی وزیراعظم کو راست رپورٹ کرتی ہے۔ یہ بات سمجھ سے باہر ہے کہ سی بی آئی نے ایسے ہائی پروفائل متنازعہ کیس میں لُک آؤٹ نوٹس میں تبدیلی وزیراعظم کی منظوری کے بغیر کی ہو۔ راہول گاندھی نے جمعرات کے دن جیٹلی پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے وجئے مالیا کی بہ آسانی بیرون ملک روانگی کو چھپایا تھا جبکہ برسراقتدار جماعت نے پلٹ وار کرتے ہوئے کہا تھا کہ گاندھی خاندان نے ڈوبتی کنگ فشر ایرلائنز کو بچانے کی کوشش کی تھی۔ کانگریس قائد پی ایل پونیا نے جمعرات کے دن دعویٰ کیا تھا کہ انہوں نے یکم مارچ 2016 کو جیٹلی کو وجئے مالیا کے ساتھ 15-20 منٹ کی تفصیلی ملاقات کرتے دیکھا تھا۔ یہ ملاقات وجئے مالیا کے ہندوستان چھوڑنے سے ایک دن قبل ہوئی تھی۔ چہارشنبہ کے دن ارون جیٹلی کے تردیدی بیان کے بعد وجئے مالیا نے کہا تھا کہ اس مسئلہ پر تنازعہ پیدا کرنا ٹھیک نہیں کیونکہ یہ رسمی یا پہلے سے طے ملاقات نہیں تھی ۔وزیر فینانس سے ملاقات یوں ہی ہوگئی تھی۔

جواب چھوڑیں