آسٹریلیائی کھلاڑی نے مجھے ’اسامہ‘ کہہ کر پکاراتھا:معین علی

آسٹریلیا کے کرکٹ حکام انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر معین علی کے ان الزام کی تحقیقات کررہے ہیں جس میں انہیں آسٹریلین کرکٹ ٹیم کے ایک رکن نے ’اسامہ‘ کہہ کر پکارا تھا۔ معین علی کے مطابق یہ واقعہ 3 برس پہلے ایک میچ کے دوران پیش آیا اور اس وقت انہیں شدید غصہ آیا تھا جب ان کا موازنہ القاعدہ کے سابق سربراہ اسامہ بن دلان سے کیاگیاتھا۔ معین علی نے اپنی آپ بیتی میں لکھا ہے کہ ایک آسٹریلوی کھلاڑی میدان میں مجھ سے مخاطب ہوا اور کہا ’یہ لو اسامہ!‘ مجھے اپنے کانوں پر یقین نہیں آیا۔ مجھے یاد ہے کہ میرا رنگ سرخ ہوگیا۔ مجھے کبھی کرکٹ کے میدان میں اتنا غصہ نہیں آیا تھا۔ معین علی مزید لکھتے ہیں کہ ’میں نے ایک دو کھلاڑیوں اور کوچ ٹریور بیلس کو اس بارے میں بتایا۔ انہوں نے آسٹریلوی کوچ ڈیرن لیہمن سے بات کی۔ لیہمن نے کھلاڑی سے پوچھا کہ تم نے معین کو اسامہ کہاہے؟ اس نے انکار کردیا۔ کرکٹ آسٹریلیا نے اس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ کھیل یا معاشرہ میں اس قسم کی زبان کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔ خیال رہے کہ ایک دن پہلے برطانوی میڈیا کے مطابق معین علی نے کہا تھاکہ انہیں بال ٹیمپرنگ اسکینڈل میں ملوث معطل آسٹریلوی کرکٹروں کے ساتھ کوئی ہمدردی نہیں ہے۔ معین علی پوری آسٹریلوی ٹیم کو ہی ’بد اخلاق‘ سمھجتے ہیں۔ معین علی نے اخبار دی ٹائمس کو بتایاکہ ’آسٹریلیا واحد ٹیم ہے جس کے خلاف میں پوری زندگی کھیلا اور اسے واقعی ناپسند کیا۔‘ انگلش آل راؤنڈر نے مزید کہاکہ آسٹریلیا سے ناپسندگی کی وجہ صرف اس لیے نہیں کہ وہ کرکٹ میں ہمارا پرانا دشمن ہے بلکہ اس کی وجہ وہ جس طرح لوگوں اور کھلاڑیوں کو بے عزت کرتے ہیں۔ معین علی نے کہاکہ انہیں بال ٹمپرنگ کی پاداش میں ایک سال کی پابندی کی سزا پانے والے اسمتھ، وارنر اور بینکرافٹ سے کوئی ہمدردی نہیں ہے۔ واضح رہے کہ کرکٹ آسٹریلیا نے بال ٹیمپرنگ اسکینڈل میں ملوث قومی کرکٹ ٹیم کے معطل کپتان اسٹیو اسمتھ اور نائب کپتان ڈیوڈ وارنر پر ایک ایک سال کی پابندی عائد کی ہے۔ ان کے علاوہ کیمرون بین کروفٹ کو نو ماہ کی پابندی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ معین علی کہتے ہیں کہ ’میں عام طورپر کچھ غلط ہوجانے پر لوگوں کیلئے ہمدردی کا اظہار کرتا ہوں لیکن ان کیلئے میرے لیے ہمدری محسوس کرنا مشکل ہے۔‘ میں نے پہلی بار ان کے خلاف 2015 کے ورلڈکپ سے پہلے سڈنی میں کھیلا تھا، وہ آپ کے خلاف صرف سخت مزاج زبان ہی نہیں بلکہ تقریباً گالی کلوچ کررہے تھے۔ انہوں نے کہاکہ مجھے پہلی بار یہ ایسا محسوس ہوا تھا۔ میں نے انہیں شک کا فائدہ دے دیا لیکن میں جتنا ان کے خلاف کھیلا اتنا ہی برا ہوا، 2015 میں ایشز سب سے بری تھی، دراصل وہ اشتعال انگیز نہیں بلکہ بداخلاق تھے۔

جواب چھوڑیں