ہندوستان نے پاکستان کو8وکٹ سے روند ڈالا‘بھونیشور کمار میان آف دی میاچ

ٹیم انڈیا نے ایشیا کپ کے اہم میاچ میں پاکستان کیخلاف8 وکٹ سے یکطرفہ کامیابی حاصل کرتے ہوئے گروپ اے میں سرفہرست مقام حاصل کرلیا ہے۔ٹاس جیت کر پہلے بیاٹنگ کرتے ہوئے پاکستان کی بیٹنگ لائن مکمل طور پر ناکام ہوگئی اور 50 اوورز بھی پورے نہ کھیل سکی۔پاکستانی ٹیم44ویں اوور میں 162 رنز پر ڈھیر ہوگئی گئی جس کے جواب میںٹیم انڈیا نے مطلوبہ ہدف باآسانی 2 وکٹ کے نقصان پر 29 اوورز میںحاصل کرلیا کپتان روہت شرما اور شیکھر دھون نے اننگز کا پراعتماد آغاز کیا اور دونوں نے 86 رنز کی اوپننگ شراکت قائم کی، اس دوران کپتان روہت شرما 52 رنز کی جارحانہ اننگز کھیل کر شاداب خان کا شکار ہونے سے قبل اپنی اننگز میں 3 چھکے اور 6 چوکے لگائے۔کپتان کے آؤٹ ہونے کے بعد شیکھر دھون نے اننگز کو آگے بڑھانا شروع کیا لیکن 104 رنز کے مجموعی اسکور پر وہ فہیم اشرف کا شکار بن گئے، دھون 46 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے۔امباٹی رائیڈو اور دنیش کارتک نے تیسری وکٹ کے لیے 60 رنز کی شراکت قائم کرتے ہوئے ٹیم کو فتح سے ہمکنار کروایا، دونوں بلے باز 31، 31 رنز پر ناقابل شکست رہے۔قبل ازیں پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا امام الحق اور فخرزمان نے اننگز کا آغازکیا تاہم اوپنرز پر اعتماد آغاز فراہم کرنے میں ناکام رہے اور صرف 3 رنز پر 2 کھلاڑی پویلین واپس لوٹ گئے، امام الحق صرف 2 رنز جب کہ فخرزمان بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوگئے۔شعیب ملک اور بابر اعظم کے درمیان تیسری وکٹ کے لیے 82 رنز کی اہم شراکت قائم ہوئی تاہم بابر اعظم غلط شارٹ کھیلتے ہوئے بولڈ ہوگئے، وہ 47 رنز کی اننگز کھیل کر پویلین لوٹے جس کے بعد کپتان سرفراز احمد بیٹنگ کے لیے آئے لیکن وہ توقعات کے برخلاف صرف 6 رنز کے مہمان ثابت ہوئے۔منیش پانڈے نے کرشماتی کیاچ لیتے ہوئے سرفراز کو پویلین کا راستہ دکھایا۔ کپتان کے آؤٹ ہوتے ہی شعیب ملک بھی 43 رنز پر رن آؤٹ ہوگئے۔ٹاپ آرڈر کی ناکامی کے بعد مڈل آرڈر نے بھی مایوس کن کارکردگی کا مظاہرہ کیا، آصف علی بھی صرف چند ہی گیندوں کے مہمان ثابت ہوئے، وہ 9 رنز بناکر پویلین لوٹے جب کہ آل راؤنڈر شاداب خان کی اننگز بھی 8 رنز تک محدود رہی۔آل راؤنڈر فہیم اشرف نے محمد عامر کے ساتھ ملکر ساتویں وکٹ کے لیے 37 قیمتی رنز جوڑے مگر فہیم اشرف جسپرٹ بمرا کا شکار بن گئے، وہ 21 رنز ہی بناسکے جب کہ حسن علی تیسری ہی گیند پر پویلین واپس لوٹ گئے، محمد عامر آخر تک مزاحمت کرتے رہے اور 18 رنز پر ناٹ آؤٹ رہے۔مجموعی طور پر پاکستانی بیاٹنگ لائن اپ ہندوستانی بولنگ کا سامناکرنے میں ناکام رہی اور ان کے 7بلے باز دوہرے ہندسے کو بھی عبور نہ کرسکے ۔بھنویشور کمار اور کیدار جادیو نے 3،3 جب کہ جسپرٹ بمرا نے 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیاآل راؤنڈر ہارڈک پانڈیا میچ کے دوران انجری کا شکار ہوگئے جس کے باعث انہیں گراؤنڈ سے باہر جانا پڑا۔پاکستانی بیاٹنگ لائن اپ کی تابوت میں آخری کیل ٹھونکنے والے بولر بھونیشور کمار کو میان آف دی میاچ کا حقدار تسلیم کیا گیا۔ٹیم انڈیا نے میچ میں 126 گیندوں قبل ہدف حاصل کیا اور اس کے ساتھ ہی یہ پاکستان کی اس لحاظ سے بدترین شکست بن گئی۔قبل ازیں ہندوستان نے بقیہ گیندوں کے اعتبار سے سب سے بڑی فتح 2006 میں ملتان میں کھیلے گئے میچ میں حاصل کی تھی جب اس نے 105 گیندوں قبل ہی ہدف حاصل کر لیا تھا۔رویتی حریف اتوار کو سوپر فور میں دوبارہ مدمقابل ہوں گے۔جمعرات کو گروپ بی کے میاچ میں افغانستان اور بنگلہ دیش کے درمیان مقابلہ ہوگا۔ٹورنمنٹ کا چھٹا میاچ شام5 بجے سے شروع ہوگا۔

جواب چھوڑیں